ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اروناچل پردیش سے متعلق سپریم کورٹ کے فیصلہ کو بی جے پی نے بتایا حیران کن

بی جے پی نے آج کہا کہ اروناچل پردیش میں کانگریس حکومت بحال کرنے کے سپریم کورٹ کے فیصلے کو ’حیران کن‘ قرار دیتے ہوئے کہاکہ وہ اس کا مطالعہ کرنے کے بعد ہی اس پر تفصیلی بیان دے گی۔

  • UNI
  • Last Updated: Jul 13, 2016 09:34 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اروناچل پردیش سے متعلق سپریم کورٹ کے فیصلہ کو بی جے پی نے بتایا حیران کن
بی جے پی نے آج کہا کہ اروناچل پردیش میں کانگریس حکومت بحال کرنے کے سپریم کورٹ کے فیصلے کو ’حیران کن‘ قرار دیتے ہوئے کہاکہ وہ اس کا مطالعہ کرنے کے بعد ہی اس پر تفصیلی بیان دے گی۔

نئی دہلی : بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے آج کہا کہ اروناچل پردیش میں کانگریس حکومت بحال کرنے کے سپریم کورٹ کے فیصلے کو ’حیران کن‘ قرار دیتے ہوئے کہاکہ وہ اس کا مطالعہ کرنے کے بعد ہی اس پر تفصیلی بیان دے گی۔ بی جے پی کے قومی سکریٹری شری کانت شرما نے یہاں پریس کانفرنس میں اروناچل پردیش کے سلسلے میں ہائی کورٹ کے فیصلے پر ردعمل پوچھے جانے پر کہا کہ اس کے مطالعہ کے بعد ہی پارٹی کی جانب سے کوئی تبصرہ کیا جائے گا۔

تاہم انہوں نے کہاکہ یہ ایک حیران کن فیصلہ ہے کیونکہ اس سے اکثریت کھو چکی کانگریس پارٹی ریاست میں حکومت بنائے گی اور جس پارٹی کے پاس اکثریت ہے اسے اپوزیشن میں بیٹھنا ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ عدالت کے فیصلہ سے یہ سوال پیدا ہوتا ہے کہ اس سے جمہوریت مضبوط ہوگی یا کمزور؟

ترجمان نے کہاکہ اروناچل پردیش میں کانگریس کی داخلی چپقلش کے سبب اس کی حکومت اقتدار سے بے دخل ہوئی تھی۔

First published: Jul 13, 2016 09:34 PM IST