உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بی جے پی کا اروند کیجریوال کو انتباہ، جیل جانے کے لئے رہیں تیار

    نئی دہلی۔ مودی حکومت پر حملے کو لے کر دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال پر نشانہ لگاتے ہوئے بی جے پی نے ان پر الزام لگایا کہ وہ ایک کے بعد ایک غیرآئینی قدم اٹھا رہے ہیں اور وہ وزیر خزانہ ارون جیٹلی کی طرف سے داخل کردہ ہتک عزت کے معاملے میں جیل جانے کے لئے تیار رہیں۔

    نئی دہلی۔ مودی حکومت پر حملے کو لے کر دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال پر نشانہ لگاتے ہوئے بی جے پی نے ان پر الزام لگایا کہ وہ ایک کے بعد ایک غیرآئینی قدم اٹھا رہے ہیں اور وہ وزیر خزانہ ارون جیٹلی کی طرف سے داخل کردہ ہتک عزت کے معاملے میں جیل جانے کے لئے تیار رہیں۔

    نئی دہلی۔ مودی حکومت پر حملے کو لے کر دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال پر نشانہ لگاتے ہوئے بی جے پی نے ان پر الزام لگایا کہ وہ ایک کے بعد ایک غیرآئینی قدم اٹھا رہے ہیں اور وہ وزیر خزانہ ارون جیٹلی کی طرف سے داخل کردہ ہتک عزت کے معاملے میں جیل جانے کے لئے تیار رہیں۔

    • IBN Khabar
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی۔ مودی حکومت پر حملے کو لے کر دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال پر نشانہ لگاتے ہوئے بی جے پی نے ان پر الزام لگایا کہ وہ ایک کے بعد ایک غیرآئینی قدم اٹھا رہے ہیں اور وہ وزیر خزانہ ارون جیٹلی کی طرف سے داخل کردہ ہتک عزت کے معاملے میں جیل جانے کے لئے تیار رہیں۔

      بی جے پی نے الزام لگایا کہ کیجریوال حکومت پوری طرح ناکام رہی ہے اور وزیر اعلی اپنی ناکامیوں کو چھپانے کے لئے اور بدعنوانی کے الزامات کا سامنا کر رہے اپنے پرنسپل سکریٹری کو بچانے کے لئے بی جے پی لیڈروں کے خلاف سیاست سے متاثرالزام منڈھ  رہے ہیں۔

      ڈی ڈی سی اے میں مبینہ بدعنوانی کے معاملے میں دہلی حکومت کی طرف سے مقرر کردہ انکوائری کمیشن کو غیر قانونی قرار دینے کے مرکز کے فیصلے کے باوجود اس کے کام کرنے پر کیجریوال کے زور دینے کے بعد انہیں آڑے ہاتھ لیتے ہوئے بی جے پی نے کہا کہ وزیر اعلی کو عدالت میں یہ دلیلیں دینی چاہئیں جہاں ہتک عزت کیس کی سماعت ہو رہی ہے۔

      بی جے پی کے قومی سکریٹری شری کانت شرما نے کہا کہ کیجریوال اور ان کے ساتھیوں کو جیل جانے کے لئے تیار رہنا چاہئے۔ ان کی حکومت نے اپنی ناکامی اور بدعنوانی کو چھپانے کے لئے کئی غیر آئینی فیصلے کئے ہیں۔ انہوں نے الزام لگایا کہ 'عآپ' حکومت مرکزی حکومت اور دیگر اداروں میں ہلچل پیدا کرنے کے لئے یہ حملے کر رہی ہے۔
      First published: