உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مرکزی وزیر ارون جیٹلی نے کیجریوال کو کیا معاف ، واپس لیں گے ہتک عزت کا کیس

    کیجریوال اور ارون جیٹلی ۔ فائل فوٹو

    کیجریوال اور ارون جیٹلی ۔ فائل فوٹو

    نئی دہلی۔ عام آدمی پارٹی ( اے اے پی) کے کنوینر اور دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے دہلی اینڈ ڈسٹرکٹ کرکٹ ایسوسی ایشن ( ڈی ڈی سی اے) سے متعلق معاملے میں مرکزی وزیر خزانہ ارون جیٹلی سے آج معافی مانگ لی۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی۔ عام آدمی پارٹی ( اے اے پی) کے کنوینر اور دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے دہلی اینڈ ڈسٹرکٹ کرکٹ ایسوسی ایشن ( ڈی ڈی سی اے) سے متعلق معاملے میں مرکزی وزیر خزانہ ارون جیٹلی سے آج معافی مانگ لی۔ ان کے علاوہ عام آدمی پارٹی کے تین دیگر رہنماؤں آشوتوش، راگھو چڈھا اور سنجے سنگھ نے بھی ارون جیٹلی سے معافی مانگی ہے۔
      کیجریوال نے جیٹلی پر الزام لگایا تھا کہ ان کے ڈي ڈی سی اے کا چیئرمین رہتے ہوئے کئی بے ضابطگیاں ہوئی تھیں۔ پارٹی کے دیگر رہنماؤں نے بھی جیٹلی پر اسی طرح کے الزامات لگائے تھے۔


      ذرائع کے مطابق ارون جیٹلی نے کیجریوال کی معافی کو قبول کرلیا ہے ۔ اب بتایا جارہا ہے کہ جیٹلی کے وکلا جلد ہی کیجریوال کے خلاف دائر اپنے مقدمے واپس لے لیں گے۔  جیٹلی نے کیجریوال اور ان کے ساتھیوں کے خلاف کورٹ میں دس کروڑ روپے کا ہتک عزت کا مقدمہ درج کرایا تھا۔


       جیٹلی کو کل بھیجے گئے ایک خط میں کیجریوال نے کہا ہے کہ انہوں نے ان کو فراہم کردہ کچھ کاغذات کی بنیاد پر الزام لگایا تھا، لیکن اب ان کی تحقیقات سے انہیں پتہ لگا ہے کہ یہ الزامات غلط تھے۔


      انہوں نے لکھا کہ اس کو دیکھتے ہوئے وہ ان سے معافی مانگتے ہیں۔  سنجے سنگھ،  آشوتوش اور  چڈھا نے بھی اسی طرح خط لکھ کر جیٹلی سے معافی مانگی ہے۔





       کیجریوال اس سے پہلے بھی ہتک عزت کے کئی دیگر معاملات میں پنجاب کے سابق وزیر اور اکالی دل کے لیڈر وکرم سنگھ مجیٹھیا، مرکزی وزیر ٹرانسپورٹ نتن گڈكری اور کانگریس لیڈر اور سابق مرکزی وزیر کپّل سبل کے بیٹے امت سبل سے بھی معافی مانگ چکے ہیں۔

      First published: