ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کیجریوال بولے۔ دہلی میں آلودگی کی وجہ سے بڑھ رہے کورونا کے معاملے، 10 دن میں کم ہو جائے گی رفتار

وزیر اعلیٰ کیجریوال نے کہا کہ دلی میں آلودگی بڑھنے کی کئی وجوہات ہیں۔ اس وقت ہر سال پرالی جلانے کو لے کر سیاست ہوتی ہے۔ پرالی جلانے سے بھی آلودگی بڑھتی ہے۔ کسان پرالی جلانا نہیں چاہتے پھر بھی ان کو پرالی جلانی پڑتی ہے

  • Share this:
کیجریوال بولے۔ دہلی میں آلودگی کی وجہ سے بڑھ رہے کورونا کے معاملے، 10 دن میں کم ہو جائے گی رفتار
دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال ( ویڈیو سے لی گئی تصویر)

نئی دہلی۔ دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال (CM Arvind Kejriwal) نے کہا کہ دلی میں کورونا وائرس (Coronavirus) کیس بڑھنے کی سب سے بڑی وجہ آلودگی ہے۔ ایسے میں آلودگی کو روکنا ہماری ذمہ داری ہے۔ کیجریوال نے کہا کہ اگلے ہفتے حکومت بہت سارے قدم اٹھائے گی جس کی چرچا جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ دہلی میں 1گلے 10 دنوں کے اندر پھر سے کورونا قابو میں آ جانا چاہئے۔


وزیر اعلیٰ کیجریوال نے کہا کہ دلی میں آلودگی بڑھنے کی کئی وجوہات ہیں۔ اس وقت ہر سال پرالی جلانے کو لے کر سیاست ہوتی ہے۔ پرالی جلانے سے بھی آلودگی بڑھتی ہے۔ کسان پرالی جلانا نہیں چاہتے پھر بھی ان کو پرالی جلانی پڑتی ہے۔ جن گاووں میں پرالی جلائی جاتی ہے ان گاووں میں کتنا دھنواں ہوتا ہے یہ بات کسی کے سامنے نہیں آتی۔ کیونکہ ان گاووں میں دلی جیسی میڈیا نہیں ہے۔



پرالی سے بنے گی کھاد

کیجریوال نے کہا ' کسانوں کو کھیت میں پرالی نہ جلانی پڑے اس کے لئے پسا انسٹی ٹیوٹ نے ایک اہم بائیو۔ ڈی کمپوزر بنایا ہے۔ اگر کسان اس لیکوڈ کا کھیت میں چھڑکاو کریں تو پرالی کے ڈنٹھل گل جاتے ہیں اور پرالی کھیت میں گل کر کھاد بن جاتی ہے۔ اس سے فائدہ یہ ہوگا کہ کھیت میں فصل کی پیداواری صلاحیت بڑھے گی'۔ کیجریوال نے کہا کہ دلی حکومت نے 24 گاووں کے کھیتوں میں اس کا چھڑکاو کرایا ہے۔ اس کے نتائج بھی اچھے دیکھنے کو مل رہے ہیں۔

بتا دیں کہ قومی دارالحکومت میں کورونا سے ہونے والی اموات کی وجہ سے گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران تعداد اموات بڑھ کر 7332 ہوگئی ہے اور اب تک 4.16 لاکھ سے زیادہ مریضوں کو انفیکشن سے نجات پانے میں کامیابی ملی ہے۔

 
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Nov 13, 2020 03:54 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading