ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ضرورت پڑی تو دہلی میں نافذ ہوسکتا ہے طاق-جفت فارمولہ: کیجریوال

دہلی میں کیجریوال حکومت اب تک تین بارطاق- جفت فارمولہ نافذ کرچکی ہے۔ آخری بار13 سے17 نومبرکے درمیان 2017 میں نافذ کیا گیا تھا۔

  • Share this:
ضرورت پڑی تو دہلی میں نافذ ہوسکتا ہے طاق-جفت فارمولہ: کیجریوال
دہلی میں آلودگی کی سطح انتہائی خراب ہوگئی ہے۔

دہلی کے وزیراعلیٰ اروند کیجریوال نے دہلی میں آلودگی میں اضافہ کے لئے مرکزی حکومت کوذمہ دار ٹھہراتے ہوئے اس بات کا اشارہ  بھی دیا کہ دہلی میں جلد ہی طاق- جفت (آڈ - ایون) فارمولہ نافذ کیا جاسکتا ہے۔ واضح رہے کہ دہلی میں ہوا کی کوالٹی ان دنوں بے حدخراب ہوگئی ہے۔


دہلی میں بڑھتی آلودگی کی روک تھام پرکیجریوال نے کہا  "آلودگی کو کم کرنے کے لئے ہم گزشتہ ایک سال سے مرکزی حکومت سے بات کررہے ہیں۔ اگریقینا آلودگی پرقابو پانا ہے توہمیں پڑوسی ریاستوں سے بات چیت کرنی ہوگی۔ مرکزکویہ کام کرنا چاہئے، جب بھی ضرورت پڑے گی ہم طاق- جفت فارمولہ نافذ کریں گے"۔ دہلی میں کیجریوال حکومت اب تک تین بارطاق- جفت فارمولہ نافذ کرچکی ہے۔ آخری باراسے 13 سے 17 نومبرکے درمیان 2017 میں نافذ کیا گیا تھا۔


واضح رہے کہ دہلی میں ہوا کی کوالٹی (معیار) انتہائی خراب ہوگئی ہے۔ فضائی آلودگی 'سنگین' مرحلے میں جانے کے بعد مرکزی آلودگی کنٹرول بورڈ ہدایت ٹاسک فورس نے لوگوں کو مشورہ دیا ہے کہ وہ اگلے تین سے پانچ دن تک گھرسے باہرنکلنے سے بچیں اورپرائیویٹ گاڑیوں کا استعمال کم ازکم کریں۔


دہلی میں اتوارکو سال میں دوسری بارآلودگی کی سطح سب سے زیادہ ریکارڈ کی گئی۔ موسم سے متلعق حالات کی وجہ سے آئندہ کچھ دنوں تک دہلی کی فضائی آلودگی انتہائی خطرناک ہوگئی ہے اوردہلی کے لوگوں کے لئے سانس لینا بھی مشکل ہورہا ہے۔
First published: Dec 25, 2018 04:22 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading