ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کیجریوال کا مودی پر نشانہ ، دہلی پولیس ہمارے پاس ہوتی تو نعرے باز اور جعلی قوم پرست غنڈے ، دونوں جیل میں ہوتے

نئی دہلی : جے این یو میں ملک مخالف نعرے اور اس کے بعد کے واقعات پر دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے ایک بار پھر ٹویٹ کے ذریعے مرکزی حکومت پر حملہ بولا ہے ۔ کیجریوال اس سے پہلے جے این یو کے طالب علموں کے خلاف پولیس کی کارروائی کو لے کر وزیر اعظم نریندر مودی کو خط لکھ چکے ہیں۔

  • Pradesh18
  • Last Updated: Feb 18, 2016 12:49 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کیجریوال کا مودی پر نشانہ ، دہلی پولیس ہمارے پاس ہوتی تو نعرے باز اور جعلی قوم پرست غنڈے ، دونوں جیل میں ہوتے
نئی دہلی : جے این یو میں ملک مخالف نعرے اور اس کے بعد کے واقعات پر دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے ایک بار پھر ٹویٹ کے ذریعے مرکزی حکومت پر حملہ بولا ہے ۔ کیجریوال اس سے پہلے جے این یو کے طالب علموں کے خلاف پولیس کی کارروائی کو لے کر وزیر اعظم نریندر مودی کو خط لکھ چکے ہیں۔

نئی دہلی : جے این یو میں ملک مخالف  نعرے اور اس کے بعد کے واقعات پر دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے ایک بار پھر ٹویٹ کے ذریعے مرکزی حکومت پر حملہ بولا ہے ۔ کیجریوال اس سے پہلے جے این یو کے طالب علموں کے خلاف پولیس کی کارروائی کو لے کر وزیر اعظم نریندر مودی کو خط لکھ چکے ہیں۔


کیجریوال نے آج اپنے ٹویٹ میں کہا کہ اگر دہلی پولیس ہمارے پاس ہوتی تو ملک کے خلاف نعرے لگانے والے اور جعلی قوم پرست غنڈے ، دونوں جیل میں ہوتے ۔ ان سے دونوں ہی نہیں سنبھل رہے ۔ صاف ہے کہ کیجریوال جے این یو میں نعرہ بازی کرنے والوں  کو گرفتار نہ کر پانے اور اس کے بعد کورٹ کے احاطے میں مار پیٹ کرنے والوں پر شکنجہ کسنے میں دہلی پولیس کی ناکامی کی طرف اشارہ کر رہے ہیں ۔


جب سے جے این یو میں نعرے لگانے کا معاملہ سامنے آیا ہے تب سے کیجریوال اور ان کی عام آدمی پارٹی مسلسل مرکزی حکومت پر حملے کر رہی ہے ۔ وہ ایک طرف تو نعرے بازی کو غلط بتا رہی ہے تو دوسری طرف اس نعرے بازی کی آڑ میں دہلی پولیس پر سیاسی ایجنڈے کے تحت کارروائی کرنے کے الزام لگا رہی ہے ۔

First published: Feb 18, 2016 12:49 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading