உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اروندکیجریوال کا پنجاب میں بھی مفت بجلی کا وعدہ، عآپ کی حکومت بنی تو 300 یونٹ مفت بجلی اور 24 گھنٹے دی جائے گی بجلی

    اروند کیجریوال

    اروند کیجریوال

    آپ نے پنجاب میں حکومت بنائی تو ہم تمام زیر التوا گھریلو بلوں کو معاف کردیں گے: اروند کیجریوالجس طرح دہلی میں 73 فیصد لوگوں کو بجلی کا صفر بل ملتا ہے ، اسی طرح پنجاب میں بھی 77 سے 80 فیصد لوگوں کو بجلی

    • Share this:
    عام آدمی پارٹی کے قومی کنوینر اور دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے پنجاب میں اپنی پہلی گارنٹی کے تحت آج تین اہم اعلانات کیے۔ انہوں نے کہا کہ اگر آپ پنجاب میں حکومت بناتی ہے تو ، ہم تمام زیر التوا گھریلو بل معاف کردیں گے ، ہر گھر کو 300 یونٹ اور 24 گھنٹے مفت بجلی دیں گے۔ جس طرح دہلی میں، 73 فیصد لوگوں کو بجلی کا بل صفر ملتا ہے ، اسی طرح پنجاب میں بھی 77 سے 80 فیصد لوگوں کو بجلی کا بل زیرو ملے گا ۔ اے اے پی کے کنوینر نے کہا کہ پنجاب خود بجلی پیدا کرتا ہے۔ اس کے باوجود اس کے پاس سب سے مہنگی بجلی ہے اور دہلی اسے دوسری ریاستوں سے خریدتی ہے ، پھر بھی اس کے پاس سب سے سستی بجلی ہے۔ پنجاب میں بجلی کمپنیوں اور حکومت کے مابین ایک گندا گٹھ جوڑ ہے۔ اگر اسے ختم کردیا گیا تو یہاں بجلی بھی سستی ہوسکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ کیجریوال کی ضمانت ہے۔ یہ کیپٹن کے وعدے نہیں ہیں  جو پانچ سالوں میں بھی پورے نہیں ہوئے۔ آپ کی حکومت کی تشکیل کے فورا بعد 300 یونٹ بجلی مفت دینے اور تمام زیر التوا گھریلو بلوں کو معاف کرنے کے احکامات جاری کردیئے جائیں گے۔ تاہم، 24 گھنٹے بجلی مہیا کرنے میں تین سے چار سال لگیں گے، کیوں کہ دہلی کی طرح یہاں بھی انفراسٹرکچر کو ٹھیک کرنا پڑے گا۔
    عام آدمی پارٹی کے قومی کنوینر اور دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے آج پنجاب کے چندی گڑھ پریس کلب میں پریس کانفرنس کرکے تین اہم اعلان کیے۔ اے اے پی کے کنوینر نے کہا کہ آج ہم ایک بہت بڑے مسئلے پر بہت بڑے اور انتہائی اہم اعلانات کرنے جارہے ہیں۔ مجھے پوری امید ہے کہ ان اعلانات سے پنجاب کے عوام اور خصوصا خواتین کے لئے بے حد خوشی ہوگی۔ پورے ملک کی تقریبا مہنگی ترین بجلی پنجاب میں ہی دستیاب ہے ، کیوں؟ پنجاب کے اندر بجلی پیدا ہوتی ہے۔ پنجاب اپنی بجلی خود تیار کرتا ہے۔ پنجاب ضرورت سے زیادہ بجلی پیدا کرتا ہے۔ اس کے باوجود ، پورے ملک میں پنجاب میں مہنگی ترین بجلی کیوں دستیاب ہے؟ ہم دہلی میں بجلی پیدا نہیں کرتے ۔ دہلی میں بجلی پیدا نہیں ہوتی۔ ہمیں تمام بجلی دوسری ریاستوں سے خریدتے ہیں۔ اس کے باوجود ، دہلی میں پورے ملک میں تقریبا سستی بجلی ہے۔ پنجاب میں بجلی مہنگی کیوں ہے؟ کیونکہ بجلی کی کمپنیوں اور پنجاب کی سرکار کے مابین ایک گندا گٹھ جوڑ ہے۔ اس گھناؤنے گٹھ جوڑ کی وجہ سے  پنجاب کے اندر بجلی مہنگی ہے۔ اس گٹھ جوڑ کو ختم ہونا ہے اور اگر یہ گٹھ جوڑ ختم ہوجائے اور ہم ان بجلی کمپنیوں کو ٹھیک کرتے ہیں تو جس طرح دہلی میں سب سے سستی بجلی ہے اسی طرح پنجاب میں بھی سب سے سستی بجلی مل سکتی ہے۔

    اروند کیجریوال نے کہا کہ ہم پچھلے ایک سال سے احتجاج کررہے ہیں۔ بھگونت مان اور چیما کی قیادت میں ، ہمارے ایم ایل اے ، کارکنان اور عام آدمی پارٹی کے سارے لوگ ڈیڑھ سال سے پنجاب میں بجلی سستی کرنے کے لئے احتجاج کررہے ہیں. اس کے لئے کتنے دھرنے دئیے گئے ، کتنے مظاہرے کئے۔ لوگوں کے درمیان گاﺅں گاؤں گئے ، لوگوں کی مشکلات سنیں۔ پنجاب میں لوگ بہت افسردہ ہیں۔ ہر طرف غم و غصہ ہے۔ امرتسر ، جالندھر ، بٹھنڈا ، لدھیانہ ، پٹھان کوٹ سمیت ہر شہر کے لوگ بجلی سے پریشان ہیں۔ اسی طرح ہر پنڈ کے لوگ بجلی کے بلوں سے پریشان ہیں۔ ایک دن مجھے بھگونت مان کا فون آیا۔ بھگونت مان نے مجھے بتایا کہ ایک غریب آدمی ہے ، جو اپنے گھر میں پنکھا اور دو بلب استعمال کرتا ہے۔ اسے 50،900 روپے کا بل ملا ہے۔ وہ بل ادا نہیں کرسکتا تھا اور اس کی بجلی کاٹ دی گئی تھی۔ اب وہ کیسے زندہ رہے گا؟ آج کوئی شخص بجلی کے بغیر کیسے جی سکتا ہے؟ ایک ہی وقت میں ، خواتین سب سے زیادہ ناخوش ہیں ، کیوں؟ ایک آدمی نوکری کرتا ہے ، کاروبار کرتا ہے یا دکان چلاتا ہے۔ وہ سارا مہینہ کماتا ہے اور وہ پیسہ اپنی بیوی کے ہاتھ میں دیتا ہے اور پورا مہینہ خواتین ، ہماری ماؤں اور بہنوں کو ہی چلانا پڑتا ہے۔ خواتین نے بتایا کہ ہماری آدھے سے زیادہ رقم بجلی کے بل پر جاتی ہے۔ تو آپ کہاں سے کھائیں گے اور اپنے بچوں کو کہاں سے تعلیم دیں گے؟ اس چیز سے سب سے زیادہ افسردہ خواتین ہیں۔

    ہم نے 2013 میں پہلی بار دہلی میں الیکشن لڑا تھا تو دہلی میں بھی ایسی ہی صورتحال تھی۔ لوگوں کو5 50 ہزار کا ملتا تھا ، کسی کو ایک لاکھ کے بل۔ لوگ اپنے بجلی کے بلوں سے پریشان تھے۔ اس وقت کی حکومت اور بجلی کمپنیوں کے مابین گٹھ جوڑ تھا۔ دہلی میں گٹھ جوڑ تھا جیسا کہ اب پنجاب میں ہے۔ مجھے آج یہ کہتے ہوئے بہت خوشی ہو رہی ہے کہ 6-7 سال کی حکومت کے بعد ، دہلی میں 24 گھنٹے بجلی اور سب سے سستی بجلی ہے۔ اب آپ نے بھی پنجاب میں یہی کام کرنا ہے۔ اگر پنجاب میں عام آدمی پارٹی کی حکومت بنے گی تو تین بڑے کام ہو جائیں گے۔ یہ ہماری پہلی گارنٹی ہے اور اس میں یہ تینوں اعلانات شامل ہیں۔آپ کے کنوینر اروند کیجریوال نے یہ تینوں اعلانات پہلی گارنٹی کے تحت کیا۔پہلا اعلان۔ اگر پنجاب میں عام آدمی پارٹی کی حکومت بنتی ہے تو پھر پنجاب میں عام آدمی پارٹی کی حکومت ہر خاندان کو 300 یونٹ تک مفت بجلی دے گی۔ اب سوال یہ پوچھا جائے گا کہ اگر دہلی میں 200 یونٹ دیئے جاتے ہیں تو پھر پنجاب میں 300 یونٹ کیوں؟ اس کے جواب میں اے اے پی کے کنوینر نے کہا کہ دہلی میں ہمارے جو ڈھانچے ہیں اس کے مطابق ہم 200 یونٹ بجلی مفت میں دیتے ہیں اور آدھے نرخ پر 200 سے 400 یونٹ بجلی دیتے ہیں۔ ہم نے اسے یہاں 300 یونٹوں کا کردیا ہے۔ اس سلسلے میں ، ہم نے حساب لگایا ہے کہ اس سے پنجاب کے تقریبا 77 سے 80 فیصد بجلی کا بل صفر ہوجائے گا۔ جس طرح دہلی میں عوام کا 73 فیصد بجلی کا بل صفر آتا ہے اسی طرح پنجاب میں بھی تقریبا 77 سے 80 فیصد لوگوں کا بجلی کا بل صفر پر آجائے گا۔ بجلی آئے گی اور 24 گھنٹے بجلی آئے گی ، لیکن بل نہیں آئے گا۔

    دوسرا اعلان۔ اروند کیجریوال نے کہا کہ پنجاب میں ایسے بہت سے لوگ ہیں ، جو غلط کے چکر میں پھنسے ہیں۔ ایک غریب آدمی ، جس کے گھر میں پنکھے اور دو بلب ہیں ، اسے 50،900 روپے کا بل کیسے مل سکتا ہے؟ بالکل نہیں آسکتے۔ بل غلط ہے۔ بل جان بوجھ کر غلط بھیجے جاتے ہیں ، وہ شخص اس کو ٹھیک کروانے جاتا ہے ، پھر وہ کہتے ہیں کہ اتنے پیسے دو ، میں آپ کا بل ٹھیک کردوں گا۔ اگر 50 ہزار کا بل ہے تو مجھے 5 ہزار روپے

    پنجاب کے اندر بھی 24 گھنٹے بجلی فراہم کی جائے گی

    تیسرا اعلان- 'آپ' کے کنوینر نے کہا کہ پنجاب میں زائد بجلی دستیاب ہے۔ پنجاب زیادہ بجلی پیدا کرتا ہے اور کم استعمال کرتا ہے۔ اس کے باوجود  اب بھی بڑی کٹوتی باقی ہے۔ کئی گھنٹوں تک بجلی نہیں ہے۔ زراعت کے لئے بجلی نہیں ہے۔ اگر پنجاب میں عام آدمی پارٹی کی حکومت بنتی ہے تو 24 گھنٹے بجلی دی جائے گی ، جس طرح ہم نے دہلی کے اندر 24 گھنٹے بجلی دی ہے۔ اسی طرح پنجاب کے اندر بھی 24 گھنٹے بجلی فراہم کی جائے گی۔ یہ تین بڑے اعلانات ہیں۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: