ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اجودھیا تنازع : ثالثی پینل کے فیصلہ سے نہیں بن سکی تو کیا ہے راستہ ؟ جانئے سب کچھ

سپریم کورٹ نے اجودھیا معاملہ میں بڑا فیصلہ سناتے ہوئے مصالحت کا حکم دیا ہے اور اس کیلئے تین رکنی پینل کی بھی تشکیل کردی گئی ہے ۔ اب یہ بھی جاننا ضروری ہے کہ آخر ثالثی پینل اس مسئلہ پر کام کیسے کرے گا ۔

  • Share this:
اجودھیا تنازع : ثالثی پینل کے فیصلہ سے نہیں بن سکی تو کیا ہے راستہ ؟ جانئے سب کچھ
اجودھیا تنازع : ثالثی پینل کے فیصلہ سے نہیں بن سکی تو کیا ہے راستہ ، جانئے سب کچھ

سپریم کورٹ نے اجودھیا معاملہ میں بڑا فیصلہ سناتے ہوئے مصالحت کا حکم دیا ہے اور اس کیلئے تین رکنی پینل کی بھی تشکیل کردی گئی ہے ۔ اب یہ بھی جاننا ضروری ہے کہ آخر ثالثی پینل اس مسئلہ پر کام کیسے کرے گا ۔ سب سے پہلے پینل کے اراکین اپنی ذمہ داری فیض آباد میں سنبھالیں گے ۔ سبھی پینل کے اراکین کو ریاستی حکومت کی جانب سے آفس اور دیگر سہولیات مہیا کرائی جائیں گی۔

پینل اس معاملہ میں شامل سبھی فریقوں کو اپنی اپنی رائے دینے کیلئے مدعو کرے گا۔ اس پورے معاملہ میں ریاستی حکومت ریسیور کے رول میں موجود رہے گی ۔ سبھی فریق اپنی اپنی رائے پینل کو دیں گے ۔ بتایا جارہا ہے کہ پہلے اس معاملہ میں الگ الگ بات کی جائے گی ۔ پھر پینل سبھی فریقوں کو یا کچھ فریقوں کو ساتھ بیٹھا کر بات کرے گا ۔

کئی راونڈ کی بات چیت کے بعد ایک یا ایک سے زیادہ فارمولہ بنایا جائے گا ۔ ایسا فارمولہ جو سبھی یا زیادہ تر فریقوں کو قبول ہو۔ یہ بھی ہوسکتا ہے کہ اس دوران پینل کے سامنے کوئی فارمولہ ہی تیار نہ ہو پائے ۔ پینل کی جانب سے جو بھی نتیجہ نکالا جائے گا ، اس کی رپورٹ عدالت عظمی کو سونپی جائے گی ۔


یہ بھی پڑھیں : اجودھیا تنازع : سپریم کورٹ کے حکم کی وہ پانچ بڑی باتیں ، جن کا آپ کیلئے جاننا ہے انتہائی ضروری


اگر سپریم کورٹ کو لگتا ہے کہ کسی ایک فارمہ پر زیادہ فریق متفق ہیں تو اس پر عدالت اپنی مہر لگادے گی ۔ عدالت کی مہر لگنے کے بعد وہ سبھی کو قابل قبول ہوگا۔ اگر کوئی متفق نہ ہوا ، تو نظر ثانی کی عرضی کے ذریعہ عدالت کے فیصلہ کو چیلنج کرسکتا ہے ۔ اس صورت میں سپریم کورٹ مصالحت کو ختم کرکے اس معاملہ میں داخل دیگر عرضیوں پر سماعت کرے گا ۔

یہ بھی پڑھیں : اجودھیا تنازع : فیض آباد میں ہوگی مصالحت کی میٹنگ ، جانیں کب سے شروع ہوگی صلح کی کارروائی

 
First published: Mar 08, 2019 05:12 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading