ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

بابری مسجد- رام مندرمعاملہ: "مندرجلدی بنائیں گے" کے نعروں سے گونج رہا ہے اجودھیا، اقلیتوں میں خوف ودہشت کا ماحول

پیرکوہونے والی وشوہندو پریشد کے جلسے میں ایک لاکھ کارکنان کے شامل ہونے کا امکان ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ وشوہندوپریشد کے جلسے میں آرایس ایس کے بھی ایک لاکھ کارکنان شامل ہوں گے۔ اس کے علاوہ بڑی تعداد میں سادھوسنتوں کے بھی ریلی میں شامل ہونے کا امکان ہے۔

  • Share this:
بابری مسجد- رام مندرمعاملہ:
بڑی تعداد میں اجودھیا پہنچ رہے ہیں شیو سینک۔

اجودھیا میں اس وقت خوف ودہشت اورتناو کا ماحول ہے۔ اس وجہ سے شہرکو ایک مجازی قلعے میں تبدیل کردیا گیا ہے۔ شیو سینا اوروشو ہندوپریشد کے ممبران 2019 کے الیکشن سے قبل مرکزی حکومت پررام مندرپرفیصلہ لینے کے لئے دباوڈالنے کی کوشش میں ہیں۔ اجودھیا میں دو بڑے جلسے ہونے جارہے ہیں۔


شیوسینا سربراہ ادھوٹھاکرے کے دوروزہ اجودھیا سفرسے پہلے جمعہ کی شب ممبئی سے چلی ٹرینوں کا اجودھیا پہنچنا شروع ہوگیا۔ پیرکوہونے والے وشوہندوپریشد کے جلسے میں ایک لاکھ کارکنان کے شامل ہونے کا امکان ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ وشوہندوپریشد کے جلسے میں آرایس ایس کے بھی ایک لاکھ کارکنان شامل ہوں گے۔ اس کےعلاوہ بڑی تعداد میں سادھوسنتوں کے بھی ریلی میں شامل ہونے کا امکان ہے۔


رام مندرکے لئے بجے اس بگل کےدرمیان مندربنانے کے لئے لگنے والا نعرہ بھی بدلتا نظرآرہا ہے۔ پہلے جونعرہ "مندروہیں بنائیں گے"، وہ اب "مندرجلدی بنائیں گے" میں تبدیل ہوچکا ہے۔ شیو سینا نے بی جے پی کوواضح پیغام دیتے ہوئے 'پہلے مندرپھرسرکار' کہہ کراپنا نظریہ واضح کردیا ہے۔


اجودھیا میں سیکورٹی کے سخت انتظامات کا دعوی

کچھ رپورٹوں میں کہا جارہا ہے کہ تشدد کے خوف سے کچھ اقلیتی افراد اجودھیا چھوڑرہے ہیں۔ اجودھیا میں رہنے والے اقلیتوں میں خوف ہےکہ کہیں 1992 کا حادثہ پھرسے نہ دوہرا دیا جائے۔ اس درمیان فیض آباد ضلع انتظامیہ کے ذریعہ رام جنم بھومی- بابری مسجد  متنازعہ مقام پردفعہ 144 نافذ کردی گئی ہے۔ ساتھ ہی ساتھ سخت سیکورٹی انتظامات کا بھی دعویٰ کیا جارہا ہے۔

اترپردیش پولیس نے اتوارکو دھرم سبھا کے دوران ہنگامہ آرائی کے خدشتہ کودیکھتے ہوئے پوری ریاست میں الرٹ جاری کردیا ہے۔ حکومت نے اے ڈی جی (لکھنو زون) آشوتوش پانڈے اورآئی جی (جھانسی) ایس ایس بگھیل کو سیکورٹی کی دیکھ بھال کے لئے مقررکیاہے۔

اجودھیا کے اے ایس پی سنجے کمارنے کہا کہ "سینٹرل پیراملٹری فورسیز کی 10 کمپنیاں اوراسٹیٹ آرمڈ پولیس کی 68 کمپنیوں کی اضافی فورسیزکولااینڈ آرڈرکوبرقراررکھنے کے لئے تعینات کیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ آس پاس کے اضلاع سے مقامی پولیس فورس کو بلایا گیا ہے"۔  ذرائع کے مطابق ریاستی پولیس کی ایک فلڈ یونٹ سرجوندی پرپٹرولنگ کرے گی جبکہ بم مخالف دستہ کے ساتھ اے ٹی ایس کمانڈو کسی بھی ناگہانی صورتحال سے نمٹنے کے لئے تیاررہے گی۔

ادھو ٹھاکرے کے جلسے میں پہنچیں گے 4000 شیوسینک

شیوسینا کے تقریباً 4 ہزارکارکنان کے اجودھیا پہنچنے کی امید ہے، جو تھانے سے پانچ ٹرینوں میں اجودھیا پہنچ رہے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی پارٹی کے 22 ممبرپارلیمنٹ، 62 ممبران اسمبلی کے بھی اجودھیا میں ہونے والی دوروزہ تقریب میں پہنچنے کی امید ہے۔ اس درمیان آرایس ایس کے لیڈرنے کہا کہ اتوارکو80 ہزارکارکنان کو اجودھیا لایا جائے گا۔ 15 ہزارٹرین سے پہنچیں گے جبکہ 14 ہزاربائیک سے اجودھیا آئیں گے۔

رام منرپرآرڈیننس لانے کا حکومت پردباو

شیوسینا ممبرپارلیمنٹ سنجے راوت نے جمعہ کوبابری مسجد شہادت کا ذکرکرتے ہوئے حکومت پررام مندرکی تعمیر کے لئے آرڈیننس لانے کا دباو ڈالا۔ راوت نے کہا کہ "بابری مسجد کو 17 منٹ میں شہید کردیا گیا تھا۔ راشٹرپتی بھون سے اترپردیش اسمبلی میں آرڈیننس لانے کے لئے کاغذات تیارکرنے میں کتنا وقت لگتا ہے، وہاں دونوں جگہ بی جے پی کی حکومت ہے"۔

اکھلیش یادو کا فوج تعینات کرنے کا مطالبہ

وہیں دوسری طرف سماجوادی پارٹی کے صدراکھلیش یادو نے کہا کہ سپریم کورٹ کو اجودھیا میں موجودہ حالت کو دھیان میں رکھنا چاہئے اورامن بنائے رکھنے اورلوگوں کے تحفظات کو یقینی بنانے کے لئے فوج تعینات کرنے پرغورکرنا چاہئے۔ انہوں نے بی جے پی پرسخت حملہ کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی کو نہ توعدالت میں اعتماد ہے اورنہ ہی آئین میں، وہ کسی بھی حد تک جاسکتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:    ہم نے 17 منٹ میں بابری مسجد منہدم کر دی تھی، قانون لانے میں دیری کیوں : شیو سینا

یہ بھی پڑھیں:   آئین کو طاق پر رکھ کر اجودھیا میں 1992 کی تاریخ دہرائی جائےگی: بی جے پی ایم ایل اے

یہ بھی پڑھیں : ساکشی مہاراج کا متنازعہ بیان : دہلی کی جامع مسجد کو توڑو ، مورتیاں نہ نکلیں تو مجھے پھانسی پر لٹکا دینا
First published: Nov 24, 2018 02:18 PM IST