உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اعظم خان کا گورنر پر جوابی حملہ ، کہا : عہدہ کا وقار برقرار رکھیں نائک

    قنوج : اترپردیش کے پارلیمانی امور اور شہری ترقی کے وزیر اعظم خاں نے آج ایک بار پھر گورنر ہاؤس پر جوابی حملہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ گورنر کو اپنے عہدے کا وقار برقرار رکھنا چاہیے۔

    قنوج : اترپردیش کے پارلیمانی امور اور شہری ترقی کے وزیر اعظم خاں نے آج ایک بار پھر گورنر ہاؤس پر جوابی حملہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ گورنر کو اپنے عہدے کا وقار برقرار رکھنا چاہیے۔

    قنوج : اترپردیش کے پارلیمانی امور اور شہری ترقی کے وزیر اعظم خاں نے آج ایک بار پھر گورنر ہاؤس پر جوابی حملہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ گورنر کو اپنے عہدے کا وقار برقرار رکھنا چاہیے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      قنوج : اترپردیش کے پارلیمانی امور اور شہری ترقی کے وزیر اعظم خاں نے آج ایک بار پھر گورنر ہاؤس پر جوابی حملہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ گورنر کو اپنے عہدے کا وقار برقرار رکھنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ کسی کو جمہوریت سے کھلواڑ کرنے کا اختیار نہیں ہے۔ گورنر ایک آئینی عہدے پر فائز ہیں اس لئے انہیں اپنے عہدے کے وقار اور ذمہ داریوں کو ذہن میں رکھنا چاہیے۔
      مسٹر خان نے یہاں انٹرنیشنل پرفیوم میوزیم اور ایک پارک کے سنگ بنیاد رکھے جانے کے بعد ایک لاکھ لیٹر کے یومیہ صلاحیت والے گائے کے دودھ کے پلانٹ کے شلایوجن کے موقع پر ایک عوامی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’اعلیٰ آئینی عہدے پر بیٹھ کر انہیں وزیر اعلیٰ کو کسی وزیر کو کابینہ میں رکھنے یا نکالنے کے سلسلے میں حکم نہیں دینا چاہیے‘‘۔
      مسٹر خاں نے اس بات پر بھی اعتراض ظاہر کیا کہ جب اجودھیا کے رام مندر کی تعمیر کا تنازعہ ملک کے سپریم کورٹ میں زیر التوا ہے تو ایسے میں اس معاملے کو ہوا دیکر گورنر عدالت کی توہین کر رہے ہیں۔ کابینی وزیر نے کہا کہ ریاست کے میونسپل کارپوریشن کا ایک میئر سینئر اہلکاروں کو اپنے چیمبر میں بلاکر مارتا پیٹتا ہے اور اس کے خلاف کوئی کارروائی نہیں ہوتی۔
      انہوں نے الزام لگایا کہ میئر حکومت کے ذریعہ فراہم کئے گئے بجٹ میں سے لاکھوں اور کروڑوں کی خورد برد کردیتا ہے، تو بھی اس کے خلاف قانونی کارروائی نہ کر پانے کی موجودہ روایت کو بدل کر قابل سزا بنانے سے متعلق آرڈیننس کو گورنر ہاؤس بھیجا جاتا ہے، لیکن گورنر اسے اپنی منظوری دینے کے بجائے اسے طویل عرصے سے زیر التوا رکھے ہوئے ہیں۔
      مسٹر خاں نے وزیر اعظم نریندر مودی کو نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ملک کے 125 کروڑ عوام سے کئے گئے وعدوں کا کیا ہوا۔ جب سے مرکز میں بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت آئی ہے ترقی کا موضوع پس پشت چلا گیا ہے۔ لوجہاد، گھر واپس جیسے موضوعات کو اچھال کر دوسری بڑی آبادی کو ذلیل کرنے کا کام کیا جارہا ہے۔ وزیر اعظم کے پاکستان دورے پر طنز کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جس دشمن کو گھر میں گھس کر مارنے کا وعدہ کیا تھا اس کی دہلیز پر متھا ٹیکا جاتا ہے۔
      واضح رہے کہ مسٹر خاں نے اترپردیش اسمبلی میں گورنر پر میئر بل کو روکنے پر سخت تبصرہ کیاتھا جس کے بعد گورنر نے اس کی سی ڈی مانگی تھی۔ سی ڈی کو سننے کے بعد گورنر نے مسٹر اعظم کے بیان کو غیر آئینی بتاتے ہوئے کہا تھا کہ وہ پارلیمانی امور کے وزیر کے عہدے کے لائق نہیں ہیں۔
      First published: