உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کاٹجو اور شوبھا ڈے کو بھی لوگ وہی سزا دیں جو اخلاق کو دی: اعظم خان

    نئی دہلی۔  دادری سانحہ کو لے کر یوپی کے کابینہ وزیر اعظم خان نے ایک بار پھر فرقہ پرستوں کی تنقید کی ہے۔

    نئی دہلی۔ دادری سانحہ کو لے کر یوپی کے کابینہ وزیر اعظم خان نے ایک بار پھر فرقہ پرستوں کی تنقید کی ہے۔

    نئی دہلی۔ دادری سانحہ کو لے کر یوپی کے کابینہ وزیر اعظم خان نے ایک بار پھر فرقہ پرستوں کی تنقید کی ہے۔

    • IBN7
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی۔  دادری سانحہ کو لے کر یوپی کے کابینہ وزیر اعظم خان نے ایک بار پھر فرقہ پرستوں کی تنقید کی ہے۔ بی جے پی اور دوسری ہندو تنظیموں پر نشانہ سادھتے ہوئے اعظم خان نے کہا ہے کہ جسٹس کاٹجو اور شوبھا ڈے کو بھی یہ لوگ وہی سزا دیں جو اخلاق کو دی گئی۔ اعظم خان کا کہنا ہے کہ گائے کے گوشت کے معاملے پر نصف ہندوستان اس کا مجرم ہے۔ اعظم خان نے بی جے پی کے رہنماؤں پر حملہ بولتے ہوئے کہا کہ وہ کہہ رہے ہیں کہ بیف کھانا ہے تو ملک چھوڑ دو۔ بیف کے نام پر بے وجہ مسلمانوں کو مارا جا رہا ہے اور سیاہی پوتی جا رہی ہے۔ آخر یہ کون سی بات ہے۔ آخر ایسے میں مسلمان کہاں جائیں۔

      ادھر دادری سانحہ پرکانگریس کے جنرل سکریٹری دگ وجے سنگھ نے بھی ایک بار پھر بی جے پی پر نشانہ سادھا ہے۔ حیدرآباد میں صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے دگ وجے سنگھ نے کہا کہ بی جے پی نے اپنے رہنماؤں کو بیان بازی نہ کرنے کی ہدایت دی ہے لیکن کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔ یہی نہیں کانگریس جنرل سکریٹری نے پوچھا ہے کہ اگر بیان بازی نہ کرنے کو کہا گیا ہے تو پھر پانچ جنیہ میں اخلاق کے قتل کوجائز کیوں ٹھہرایا گیا۔ دگ وجے سنگھ کا کہنا ہے کہ سدھیندر کلکرنی کے منہ پر سیاہی پوتنا اور شیوسینا پر کوئی کارروائی نہ کرنا مودی حکومت کی ناکامی ہے۔
      First published: