உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اجودھیاکے بابری مسجد۔رام جنم بھومی کے مالکانہ تنازعہ معاملہ سے منسلک درخواستوں پر آج سماعت شروع ہوگی

    اجودھیا بابری مسجد معاملے میں آج آخری سماعت

    سپریم کورٹ میں ایودھیاکے بابری مسجد -رام جنم بھومی کے مالکانہ تنازعہ معاملہ سے منسلک درخواستوں پر آج سماعت شروع ہوگی۔چیف جسٹس دیپک مشرا کی قیادت والی بنچ اس کیس میں لنچ کے بعد دو بجے سماعت کرے گی۔کورٹ میں ہونے والی یہ سماعت بہت اہم ہے، کیونکہ جسٹس مشرا نے سنی وقف بورڈ اور دیگر کی اس دلیل کو مسترد کردیا تھا کہ درخواستوں پر اگلے عام انتخابات کے بعد سماعت ہو۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      ںئی دہلی۔سپریم کورٹ میں ایودھیاکے بابری مسجد -رام جنم بھومی کے مالکانہ تنازعہ معاملہ سے منسلک درخواستوں پر آج سماعت شروع ہوگی۔چیف جسٹس دیپک مشرا کی قیادت والی بنچ اس کیس میں لنچ کے بعد دو بجے سماعت کرے گی۔کورٹ میں ہونے والی یہ سماعت بہت اہم ہے، کیونکہ جسٹس مشرا نے سنی وقف بورڈ اور دیگر کی اس دلیل کو مسترد کردیا تھا کہ درخواستوں پر اگلے عام انتخابات کے بعد سماعت ہو۔

      اس بنچ نے گزشتہ سال پانچ دسمبر کو واضح کیا تھا کہ وہ آٹھ فروری (آج) سے ان درخواستوں پر آخری سماعت شروع کرے گی۔سینئر وکلا- کپل سبل اور راجیو دھون نے گزشتہ سماعت کے دوران دلیل دی تھی کہ دیوانی اپیلوں کی سماعت کو یا تو پانچ یا سات ججوں کی بنچ کو سونپا جائے یا اسے اس حساس نوعیت اور ملک کے سیکولر تانے بانے اور جمہوریت پر اس کے اثرات کو ذہن میں رکھتے ہوئے 2019 کے انتخابات کے بعد کے لئے رکھا جائے۔

      اجودھیا تنازعہ میں 30 ستمبر 2010 کو الہ آباد ہائی کورٹ کی لکھنؤ بنچ نے اپنے فیصلے میں 2.77 ایکڑ متنازع اراضی کو سنی وقف بورڈ، نرموہی اکھاڑہ اور رام للا کے درمیان برابرتین حصوں میں تقسیم کرنے کا حکم دیا تھا۔ اس کے خلاف 14 فریقین نے عدالت میں اسپیشل پرمیشن پٹیشن (خاص اجازت عرضی) دائر کی ہے۔
      First published: