உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Batla House Encounter: عارض خان نے پھانسی کی سزا کو دہلی ہائی کورٹ میں کیا چیلنج

    Batla House Encounter: عارض خان نے پھانسی کی سزا کو دہلی ہائی کورٹ میں کیا چیلنج

    Batla House Encounter: عارض خان نے پھانسی کی سزا کو دہلی ہائی کورٹ میں کیا چیلنج

    دہلی کی ساکیت کورٹ نے اسے ریئریسٹ آف ریئر کیس مانتے ہوئے عارض خان کو پھانسی کی سزا سنائی تھی ۔ ساکیت کورٹ نے آٹھ مارچ کو عارض خان کو پھانسی کی سزا سنائی تھی ۔ ساتھ ہی ساتھ ساکیت کورٹ نے عارض خان پر گیارہ لاکھ کا جرمانہ بھی لگایا تھا ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : بٹلہ ہاؤس انکاؤنٹر کیس میں قصور وار عارض خان نے نچلی عدالت سے ملی پھانسی کی سزا کو دہلی ہائی کورٹ میں چیلنج کیا ہے ۔ دہلی کی ساکیت کورٹ نے اسے ریئریسٹ آف ریئر کیس مانتے ہوئے عارض خان کو پھانسی کی سزا سنائی تھی ۔ ساکیت کورٹ نے آٹھ مارچ کو عارض خان کو پھانسی کی سزا سنائی تھی ۔

      ساتھ ہی ساتھ ساکیت کورٹ نے عارض خان پر گیارہ لاکھ کا جرمانہ بھی لگایا تھا ، جس میں سے دس لاکھ روپے انسپکٹر موہن چند شرما کے اہل خانہ کو دینے کا حکم دیا تھا ۔ اس معاملہ میں پہلے قصور وارشہزاد احمد کو دوہزار تیرہ میں سزا سنائی گئی تھی ۔ جبکہ دو دیگر عاطف امین اور محمد ساجد انکاؤنٹر میں مارا گیا تھا ۔ عارض خان کو 2018 میں نیپال سے گرفتار کیا گیا تھا ۔

      بتادیں کہ بٹلہ ہاوس انکاونٹر میں انسپکٹر موہن چند شرما شہید ہوگئے جبکہ بلونت سنگھ راجیو کو بھی مارنے کی کوشش کی گئی تھی ۔ سال 2008 میں دہلی ، جے پور ، احمد آباد اور اترپردیش کی عدالتوں میں جو دھماکے ہوئے تھے ، اس میں بھی عارض خان کا نام سازش کرنے والوں میں شامل ہے ۔ ان سبھی دھماکوں میں 165 افراد کی موت ہوگئی تھی جبکہ 535 افراد زخمی ہوئے تھے ۔

      دھماکوں کے بعد اس وقت عارض پر 15 لاکھ روپے کے انعام کا اعلان کیا گیا تھا اور اس کے خلاف انٹرپول کے ذریعہ ریڈ کارنر نوٹس جاری ہوا تھا ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: