ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

ہندوستان کونہیں ہے امریکہ کی پرواہ، روس سے خریدا ایس 400 میزائیل

میزائیلوں کی سپلائی دستخط ہونے کے دوسال کے اندریعنی 2020 تک شروع ہوجائے گی۔

  • UNI
  • Last Updated: Oct 05, 2018 04:53 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ہندوستان کونہیں ہے امریکہ کی پرواہ، روس سے خریدا ایس 400 میزائیل
وزیراعظم نریندر مودی روسی صدر سے گرمجوشی سے ملاقات کرتے ہوئے۔

نئی دہلی: ہندوستان نے امریکہ کی طرف سے پابندیوں کی پرواہ کئے بغیرآج روس سے تقریباً چارسو کلومیٹر تک فضا سے فضا میں مار کرنے والے جدید ترین ایئر ڈیفنس سسٹم ایس 400 کی خریداری کے سودے پر دستخط کردیئے۔


ہندوستان کے دورے پر آئے روس کے صدر ولادیمیر پوتن اور وزیر اعظم نریندر مودی کے درمیان آج یہاں ہوئی وفد کی سطح کی میٹنگ میں اس سودے پر دستخط کئے گئے۔ ہندوستان 5.43 ارب ڈالر یعنی تقریباً 40  ہزارکروڑ روپئے میں فضا سے فضا میں مارکرنے والے ان غیرمعمولی میزائیلوں کے پانچ اسکوارڈن خریدے گا۔ میزائیلوں کی سپلائی دستخط ہونے کے دوسال کے اندریعنی 2020 تک شروع ہوجائے گی۔

یہ سودا امریکہ کی اس وارننگ کے باوجود کیا گیا ہے جس میں روس سے ہتھیار خریدنے پراقتصادی پابندی عائد کرنے کی بات کہی گئی ہے۔ ہندوستان نے وزیر دفاع اوروزیر خارجہ کی سطح پر امریکہ سے پہلے ہی واضح کردیا ہے کہ وہ روس سے ایس 400 میزائل کے سودے سے پیچھے نہیں ہٹے گا۔ اس نے کہا ہے کہ روس کے ساتھ اس کے دہائیوں پرانے دفاعی تعلقات ہیں اور اس سے طویل عرصے سے دفاعی ساز وسامان خرید رہا ہے اور ایس 400 میزائیل سودے پر بھی طویل عرصے سے بات چیت چل رہی تھی۔

امریکہ نے کہا تھا کہ وہ ہندوستان پر کاٹسا یعنی کاونٹرنگ امریکہ ایڈورسریز تھرو سینکشن ایکٹ کے تحت اقتصادی پابندی عائد کرسکتا ہے۔ اس قانون میں التزام ہے کہ اگر کوئی بھی ملک روس، ایران یا شمالی کوریا سے ہتھیاروں کی خریداری کرتا ہے تو اسے امریکی پابندیوں کا سامنا کرنا پڑے گا۔


یہ بھی پڑھیں:   وزیراعظم مودی نے گلے مل کرکیاروسی صدر کا استقبال،، سیکورٹی کے موضوعات پرہوگا خصوصی غوروخوض

میٹنگ کے بعد جاری مشترکہ بیان میں کہا گیا ہے کہ دونوں فریق ایس 400 میزائل خریداری سودے کا خیرمقدم کرتے ہیں۔  ایس 400 میزائل فضا سے فضا میں مارکرنے والی جدید ترین ایئرڈیفنس سسٹم ہے جوروس کی سرکاری کمپنی المازاینٹے نے تیارکی ہے اور یہ فضا میں 380کلومیٹر تک کسی بھی ہدف کو نشانہ بناسکتی ہے۔ یہ  ڈرون ، طیارہ یا میزائل کسی بھی حملے کو پہلے ہی بھانپ کر فضا میں نیست و نابود کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔
فضائیہ کے سربراہ ایر چیف مارشل بی ایس دھنووا نے دو دن پہلے ہی کہا تھا کہ ایس 400 میزائل ایر ڈیفنس سسٹم فوج کے لئے بوسٹر ڈوز کی طرح ہے اور اس سے ہندوستان کی فضائی طاقت کئی گنا بڑھ جائے گی۔ چین اور پاکستان کے پاس جدید ترین جنگی طیاروں کو دیکھتے ہوئے ہندوستان کے لئے یہ میزائیل سسٹم انتہائی ضروری ہے۔

یہ بھی پڑھیں:    ایران سے گیس پائپ لائن کیلئے روس-پاکستان کا معاہدہ

ذرائع کے مطابق ہندوستان کے یہ سودا کرنے سے یہ پیغام بھی جائے گا کہ وہ اسٹریٹیجک معاملات میں کسی کے دباو میں آنے والا نہیں ہے۔ روس امریکی پابندیوں کی مخالفت میں یہ میزائل صرف ہندوستان ہی نہیں بلکہ چند دیگرملکوں بھی فروخت کرنے کے بارے میں بات کررہاہے۔ ان میں ناٹو کا اہم ملک ترکی بھی شامل ہے۔ چین اس میزائل کو پہلے ہی خرید چکا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:    شام میں ایس-300 میزائل نظام کی تعیناتی روس کی ’بڑی بھول‘ : امریکہ

یہ بھی پڑھیں:                 امریکہ میں روس کیلئے جاسوسی کرنے والی ماریا بوٹينا کو جیل

 
First published: Oct 05, 2018 04:49 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading