உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Fake SMS: بلامعاوضہ بجلی، ٹیلی کام بل کی ادائیگی کی پیکش پرمبنی پیغام، ہوسکتاہےجعلی!

    نامعلوم شدہ پیغٓام پر یقین نہ کریں۔

    نامعلوم شدہ پیغٓام پر یقین نہ کریں۔

    اس واقعے کو یاد کرتے ہوئے گرشین نے کہا کہ بعد میں اس سے ایک اور شخص نے رابطہ کیا اور کہا کہ اگر وہ آن لائن رقم ادا نہیں کرنا چاہتی، تو وہ اس سے کال پر رابطہ کریں گے اور اس کے کارڈ کی تفصیلات طلب کریں گے۔ اس کے بعد اس نے ٹویٹر پر جانے سے پہلے ایک منٹ بھی ضائع نہیں کیا۔

    • Share this:
      ایک ہفتہ قبل راہول کو ایک ایس ایم ایس موصول ہوا جس میں مطالبہ کیا گیا کہ وہ اپنے پچھلے مہینے کا بجلی کا بل ادا کریں۔ پیغام میں کہا گیا کہ اگر واجبات ادا نہ کیے گئے تو ان کے گھر کی بجلی منقطع کر دی جائے گی۔ اس نے اس سے یہ بھی کہا کہ وہ اس میں درج نجی نمبر پر ’بجلی کے افسر‘ سے رابطہ کرے۔ راہول کو یاد نہیں تھا کہ اس نے بل ادا کیا ہے یا نہیں، اس نے نمبر پر کال کی اور جیسے ہی جواب دینے والے شخص نے بولنا شروع کیا، راہل نے جلدی سمجھ لیا کہ یہ ایک گھوٹالہ تھا۔ بعد میں اس نے آہ بھری اور کہا کہ مجھے وقوف بنایا گیا ہے!

      ناگپور میں مقیم ایک صحافی گورشین گہلن نے کہا کہ گھپلے کرنے والوں نے مہاراشٹرا اسٹیٹ الیکٹرسٹی ڈسٹری بیوشن کمپنی لمیٹڈ (MSEDCL) کا کارکن ظاہر کیا اور صارفین سے ان کے زیر التواء بلوں کی ادائیگی کے سلسلے میں واٹس ایپ پر رابطہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ دھوکہ دہی کرنے والوں نے صارفین سے آن لائن ادائیگی کرنے کی بھی تاکید کی اور جب وہ راضی ہو گئے تو انہیں ذاتی Gpay اکاؤنٹ پر بھیج دیا گیا۔

      اس واقعے کو یاد کرتے ہوئے گرشین نے کہا کہ بعد میں اس سے ایک اور شخص نے رابطہ کیا اور کہا کہ اگر وہ آن لائن رقم ادا نہیں کرنا چاہتی، تو وہ اس سے کال پر رابطہ کریں گے اور اس کے کارڈ کی تفصیلات طلب کریں گے۔ اس کے بعد اس نے ٹویٹر پر جانے سے پہلے ایک منٹ بھی ضائع نہیں کیا۔

      ایک صارف نے یہاں تک کہا کہ اسے ایک اسکیم میسج موصول ہوا ہے اور کالر مجھ سے آلہ لینے کے لیے TeamViewer ایپ انسٹال کرنے کی کوشش کر رہا تھا۔ یہاں حیران کن بات یہ تھی کہ صارف کے پاس اپنے نام پر بجلی کا کوئی کنکشن نہیں تھا۔ ایک اور صارف نے کہا کہ جب گھوٹالے ممبئی میں ہو رہے ہیں تو بنگال سے کالیں ڈائل کی جا رہی ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں: Agneepath Recruitment: انڈین آرمی میں اگنی پتھ اسکیم کے تحت بھرتی 2022، جانیے تفصیلات

      اس طرح کے واقعات پر سوشل میڈیا میں بھی دھوکہ دہی کے پیغامات سے متعلق باتیں ہونے لگی ہے۔ محکمہ بجلی، ٹیلی کام کمپنیاں اور مختلف ریاستوں میں پولیس ایسے دھوکہ بازوں کے طریقہ کار کے بارے میں بیداری پھیلانے کے لیے حرکت میں آگئی۔ یہاں تک کہ انہوں نے ٹویٹر پر جانے والے لوگوں کو بھی جواب دیا اور انہیں شکایت درج کرنے کا کہا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں: EPF Transfer:گھربیٹھے آن لائن ٹرانسفرکریں اپنا پی ایف اکاؤنٹ،جانیے مرحلہ وارآسان طریقہ

      ایک صارف کو جواب دیتے ہوئے جس نے باقاعدہ موبائل نمبر سے دھوکہ دہی والے SMS موصول ہونے کے بارے میں پوسٹ کیا تھا۔ اس پر JioCare نے کہا کہ یہ SMS ایک فراڈ/اسکیم ایس ایم ایس لگتا ہے۔ Jio کبھی بھی آپ سے کسی بھی دستاویز کو جمع کرانے کے لیے کسی موبائل نمبر پر کال کرنے کو نہیں کہتا ہے۔ براہ کرم ایسے نمبروں پر کال نہ کریں کیونکہ ان نمبروں پر کال کرنے سے آپ کے اکاؤنٹ کی حفاظت کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: