اپنا ضلع منتخب کریں۔

    کووڈ۔19 کےخلاف بھارت بائیوٹیک کی پیش رفت، ناک سےلی جانےوالی ویکسین کی قیمتوں کااعلان

    بھارت بائیوٹیک انٹرنیشنل لمیٹڈ نے یہ اعلان کیا ہے۔

    بھارت بائیوٹیک انٹرنیشنل لمیٹڈ نے یہ اعلان کیا ہے۔

    ویکسین بنانے والی کمپنی بھارت بائیوٹیک انٹرنیشنل لمیٹڈ کی جانب سے ایک پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ یہ ویکسین جنوری 2023 کے چوتھے ہفتے میں متعارف کرایا جائے گا۔ iNCOVACC دنیا کی پہلی انٹراناسل ویکسین ہے جو کووڈ۔19 کے خلاف دو خوراکوں پر مشتمل ہوگی۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi, India
    • Share this:
      بھارت بائیوٹیک انٹرنیشنل لمیٹڈ (Bharat Biotech International Limited) نے منگل کے روز کہا کہ اس کی کووڈ۔19 انٹراناسل ویکسین iNCOVACC کی قیمت نجی مارکیٹوں کے لیے 800 روپے (جی ایس ٹی کو چھوڑ کر) اور سرکاری سپلائیز کے لیے 325 روپے (جی ایس ٹی کو چھوڑ کر) ہے۔ کووڈ۔19 انٹراناسل ویکسین اب کووین پورٹل پر دستیاب ہے۔

      ویکسین بنانے والی کمپنی بھارت بائیوٹیک انٹرنیشنل لمیٹڈ کی جانب سے ایک پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ یہ ویکسین جنوری 2023 کے چوتھے ہفتے میں متعارف کرایا جائے گا۔ iNCOVACC دنیا کی پہلی انٹراناسل ویکسین ہے جو کووڈ۔19 کے خلاف دو خوراکوں پر مشتمل ہوگی۔ اس میں سے ایک ہیٹرولوجس بوسٹر خوراک کے طور پر ہوگی۔

      اس ماہ کے شروع میں بھارت بائیوٹیک کو سنٹرل ڈرگس اسٹینڈرڈ کنٹرول آرگنائزیشن (CDSCO) سے iNCOVACC کی ہیٹرولوگس بوسٹر خوراکوں کے استعمال کے لیے منظوری ملی۔ بی بی آئی ایل کے ایگزیکٹو چیئرمین کرشنا ایلا نے کہا کہ ہم نے کوویکسین اور iNCOVACC کو تیار کرچکے ہیں۔ یہ دو کووڈ۔19 ویکسین تیار کی گئی ہیں۔ یہ صحت عامہ کی ہنگامی صورتحال اور وبائی امراض کے دوران آسان اور بغیر تکلیف کے حفاظتی ٹیکے حاصل کرنے میں مدد دے گی۔

      یہ بھی پڑھیں: 

      آئی این سی او وی اے سی سی کے فیز تین ٹرائلز (ایک دو خوراک کے طریقہ کار کے طور پر) تقریباً 3100 کیسوں میں حفاظت، امیونوجنیسیٹی کے لیے پورے ہندوستان میں 14 ٹرائل سائٹس میں کیے گئے جبکہ ہیٹرولوگس بوسٹر ڈوز اسٹڈیز 875 کیسوں میں حفاظت اور امیونوجنیسیٹی کے لیے کی گئیں۔

      نیسل ویکسین iNCOVACC کو واشنگٹن یونیورسٹی، سینٹ لوئس کے ساتھ شراکت میں تیار کیا گیا، جس نے ریکومبیننٹ ایڈینو وائرل ویکٹرڈ کنسٹرکٹ کو ڈیزائن اور تیار کیا تھا اور افادیت کے لیے پری کلینیکل اسٹڈیز میں اس کا جائزہ لیا گیا تھا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: