உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کشمیری لڑکیوں کا سنسنی خیز الزام، مکان مالکن انجان شخص کے ساتھ کمرے میں گھس آئی اور کی بیحد ہی گھٹیا حرکت

    کشمیر کی رہنے والی ایک لڑکی نور کا ایک ٹویٹ 14 اکتوبر سے وائرل (Viral Tweet) ہو رہا ہے۔ نور نے ٹویٹ کرتے ہوئے الزام لگایا ہے کہ اس کی مکان مالکن ایک آدمی جو اس کیلئے انجان تھا کے ساتھ  اس کے کمرے میں گھس آئی۔ اور انتہائی گھٹیا حرکت کر ڈالی۔

    کشمیر کی رہنے والی ایک لڑکی نور کا ایک ٹویٹ 14 اکتوبر سے وائرل (Viral Tweet) ہو رہا ہے۔ نور نے ٹویٹ کرتے ہوئے الزام لگایا ہے کہ اس کی مکان مالکن ایک آدمی جو اس کیلئے انجان تھا کے ساتھ اس کے کمرے میں گھس آئی۔ اور انتہائی گھٹیا حرکت کر ڈالی۔

    کشمیر کی رہنے والی ایک لڑکی نور کا ایک ٹویٹ 14 اکتوبر سے وائرل (Viral Tweet) ہو رہا ہے۔ نور نے ٹویٹ کرتے ہوئے الزام لگایا ہے کہ اس کی مکان مالکن ایک آدمی جو اس کیلئے انجان تھا کے ساتھ اس کے کمرے میں گھس آئی۔ اور انتہائی گھٹیا حرکت کر ڈالی۔

    • Share this:
      کشمیر کی رہنے والی ایک لڑکی نور کا ایک ٹویٹ 14 اکتوبر سے وائرل (Viral Tweet) ہو رہا ہے۔ نور نے ٹویٹ کرتے ہوئے الزام لگایا ہے کہ اس کی مکان مالکن ایک آدمی جو اس کیلئے انجان تھا کے ساتھ  اس کے کمرے میں گھس آئی۔ بھدی زبان کا استعمال کیا۔ فرنیچر توڑ دیا گیا۔ اسے دہشت (Terrorists) گرد بولا۔ صرف اس لئے کہ وہ کشمیر کی رہنے والی ہے۔ وہ بھی دہلی پولیس  (Delhi Police)   کے سامنے۔ وہیں یہ معاملہ سوشل میڈیا پر طول پکڑنے کے بعد پولیس نے کشمیری لڑکیوں کی جانب سے ایف آئی آر  (FIR) درج کر لی ہے۔ وہیں مکان مالکن سے ملی شکایت کی جانچ کی جا رہی ہے۔
      کشمیری لڑکیوں نے لگایا یہ الزام
      کشمیر کی رہنے والی دو بہنیں ایسٹ آف کیلاش کے ای بلاک ممیں کرائے کے گھر ممیں رہتی ہیں۔ ایک لڑکی نور نے الزام لگایا ہے کہ مکان مالکن نے لاکر توڑ کر سامان باہر پھینک دیا۔ ساتھ ہی کپڑے اور بیس ہزار روہئے کی چوری کر لی۔ باہری آدمی کو بلاکر ہمارا سامان پھینکوا دیا۔ گالی۔گلوچ کی گئی۔ پولیس کی موجودگی  میں دہشت گرد بولا گیا۔ ہم نے پولیس میں شکایت دی ہے معاملہ درج کر لیا گیا ہے۔

      مکان مالکن کا الزام کرایہ نہیں ملتا وقت سے۔
      بتادیں کی جس عمارت میں کشیمیر کی یہ لڑکیاں رہتی ہیں اس کی مکان مالکن ترونا سکھیجا ہے۔ ترونا کا الزام ہے کہ کرائے دار نے ٹویٹ کرکے الزام لگائے ہیں وہ بے بیناد ہیں۔ اگر ہمیں ایسا کہنا ہوتا تو شروع میں ہی کرائے کے گھر کیلئے گھر نہیں دیتے۔ کرائے دار لڑکیوں کو کچھ ایسا نہیں کہا ہے جیسا وہ الزام لگا رہی ہیں۔ دونں لڑکیاں جموں۔کشمیر کے کسی بڑی لیڈر کی بیٹیاں ہیں جو سوشل میڈیا پر غلط بیان بازی کر رہی ہیں۔ وہ پہلے بی کئی مرتبہ امر کالون تھانے میں شکایت دے چکی ہیں۔

      وہیں اس معاملے پر ڈی سی پی ایسٹ آرپی مینا کا کہنا ہے کہ 14 اکتوبر کو 8.40  بجے گھر کا دروازہ توڑ کر چوری کی ایک پی سی آر کال امر کالونی تھانے میں ملی تھی۔ اس گھر میں کشمیر کی رہنے والی دو بہنیں کرائے پر رہتی ہیں۔ مکان مالکن ترونا مکھیجا نے کال کی تھی۔ اس سے پہلے بھی کئی مرتبہ بجلی کا بل اور کرایہ نہین دینے کا الزام لگایا تھا لیکن لڑکی نور کا الزام ہے کہ اس کے کمرے کا تالا توڑ کر کپڑے اور بیس ہزار روہئے چرا لئے گئے ہیں۔ معاملے پر کارروائی جاری ہے۔
      Published by:sana Naeem
      First published: