ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

بہار الیکشن میں شرمناک شکست کے بعد حکومت جاگی، ایوارڈ واپس کرنے والوں سے کرے گی بات چیت

نئی دہلی۔ مرکز میں برسراقتدار پارٹی بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی بہار اسمبلی الیکشن میں شرمناک شکست اور ملک میں اس کے دور اقتدار میں عدم رواداری کے بڑھتے ہوئے واقعات پر تنقیدوں کا سامنا کرنے کے بعد مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے آج ان دانشوروں، قلمکاروں، فنکاروں اور سائنسدانوں نیز فوجیوں کو اس مسئلے پر حکومت کے ساتھ بات چیت کے لئے مدعوکیا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Nov 11, 2015 10:44 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
بہار الیکشن میں شرمناک شکست کے بعد حکومت جاگی، ایوارڈ واپس کرنے والوں سے کرے گی بات چیت
نئی دہلی۔ مرکز میں برسراقتدار پارٹی بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی بہار اسمبلی الیکشن میں شرمناک شکست اور ملک میں اس کے دور اقتدار میں عدم رواداری کے بڑھتے ہوئے واقعات پر تنقیدوں کا سامنا کرنے کے بعد مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے آج ان دانشوروں، قلمکاروں، فنکاروں اور سائنسدانوں نیز فوجیوں کو اس مسئلے پر حکومت کے ساتھ بات چیت کے لئے مدعوکیا ہے۔

نئی دہلی۔  مرکز میں برسراقتدار پارٹی بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی بہار اسمبلی الیکشن میں شرمناک شکست اور ملک میں اس کے دور اقتدار میں عدم رواداری کے بڑھتے ہوئے واقعات پر تنقیدوں کا سامنا کرنے کے بعد مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ  نے آج ان دانشوروں، قلمکاروں، فنکاروں اور سائنسدانوں نیز فوجیوں کو اس مسئلے پر حکومت کے ساتھ بات چیت کے لئے مدعوکیا ہے۔


مسٹر راجناتھ سنگھ نے کہا کہ جن لوگوں نے عدم رواداری کے مسئلے پر اپنے قیمتی ایوارڈ واپس کئے ہيں، انہیں آگے آنا چاہئے اور حکومت کے سامنے اپنا موقف اور اپنی آراء پیش کرنا چاہئے۔ وزیر داخلہ نے کل یہاں نامہ نگاروں کے ساتھ بات چیت میں کہا کہ ’دانشوروں اور مصنفوں کی آراء اور مشورے قابل قدر ہوں گے اور حکومت کو پوری سنجیدگی سے ان پر غور و خوض کرے گی‘۔


تاہم، مسٹر راجناتھ سنگھ نے اس بات کو یکسر مسترد کردیا کہ بی جے پی لیڈروں کے اشتعال انگیز بیانات اور ریزرویشن سے متعلق آر ایس ایس سربرا ہ موہن بھاگوت کے بیان کی وجہ سے بہار میں بی جے پی کی شکست ہوئي ہے۔

First published: Nov 11, 2015 10:44 AM IST