ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

بہار: 2019 عام انتخابات کے لئے بی جے پی اور جے ڈی یو میں شروع ہوئی رسہ کشی، کسی ملیں گی زیادہ سیٹیں؟

سال 2019 کے عام انتخابات کے لئے بہار میں این ڈی اے کی اتحادی جے ڈی یو اور بی جے پی میں سیٹوں کی تقسیم کو لے کر رسہ کشی شروع ہوگئی ہے۔ بہار کی 40 سیٹوں کو لے کر دونوں پارٹیاں اپنے الگ الگ دعوے کررہی ہیں۔

  • Share this:
بہار: 2019 عام انتخابات کے لئے بی جے پی اور جے ڈی یو میں شروع ہوئی رسہ کشی، کسی ملیں گی زیادہ سیٹیں؟
سال 2019 کے عام انتخابات کے لئے بہار میں این ڈی اے کی اتحادی جے ڈی یو اور بی جے پی میں سیٹوں کی تقسیم کو لے کر رسہ کشی شروع ہوگئی ہے۔ بہار کی 40 سیٹوں کو لے کر دونوں پارٹیاں اپنے الگ الگ دعوے کررہی ہیں۔

نئی دہلی: سال 2019 کے عام انتخابات میں ایک سال باقی ہے۔ بہار میں این ڈی اے کی اتحادی جے ڈی یو اور بی جے پی میں سیٹوں کی تقسیم کو لے کر رسہ کشی شروع ہوگئی ہے۔ بہار کی 40 سیٹوں کو لے کر دونوں پارٹیاں اپنے الگ الگ دعوے کررہی ہیں۔


جوکی ہاٹ ضمنی اسمبلی الیکشن میں این ڈی اے امیدوار کو لالو پرساد یادو کی آرجے ڈی کے امیدوار سے شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ اس کے بعد ہی جے ڈی یو اور بی جے پی درمیان سیٹوں کی تقسیم کو لے کر رسہ کشی شروع ہوگئی ہے۔


جے ڈی یو کا کہنا ہے کہ وزیراعلیٰ نتیش کمار بہار میں این ڈی اے اتحاد کا چہرہ ہیں اور وہ بی جے پی کے مقابلے میں سینئر معاون ہیں، ایسے میں اسے زیادہ سیٹیں ملنی چاہئے۔ اس پر بی جے پی کا رد عمل فوراً آیا۔ اس کی طرف سے کہا گیا ہے کہ بہار میں نتیش کمار این ڈی اے کا چہرہ ہیں، لیکن لوک سبھا الیکشن وزیراعظم نریندر مودی کی قیادت میں لڑا جائے گا، ایسے میں وہ بھی زیادہ سیٹوں کی دعویدار ہے۔


اس معاملے میں سب سے اہم سوال یہ ہے کہ آئندہ لوک سبھا الیکشن میں جے ڈی یو کے لئے سیٹوں کی تقسیم کس حساب سے ہوگی۔ 2014 کی خراب کارکردگی کے مطابق یا 2015 کے اسمبلی الیکشن کے مطابق؟ 2014 میں جے ڈی یو اکیلے الیکشن لڑی تھی، لیکن اسے دو سیٹیں ہی مل سکی تھیں۔ ایک سال بعد اسمبلی کے الیکشن میں کانگریس اور آر جے ڈی کے ساتھ اتحاد کرکے اس نے بڑی کامیابی حاصل کی تھی، لیکن تھوڑے وقت کے بعد ہی اس نے پھر سے بی جے پی سے ہاتھ ملا لیا۔ 2009 کے عام انتخابات میں بی جے پی اور جے ڈی یو نے مل کر مقابلہ کیا تھا، اس میں جے ڈی یو 25 میں سے 22 اور بی جے پی نے 15 میں سے 12 سیٹیں جیتی تھیں۔

اتوار کو پارٹی کی میٹنگ کے بعد کے سی تیاگی اور پون ورما کے بیانات کو آگے بڑھاتے ہوئے پارٹی ترجمان اجے آلوک نے کہا تھا کہ بہار میں نتیش کمار شروع سے ہی این ڈی اے کے لیڈر رہے ہیں جبکہ جے ڈی اتحاد کی سینئر پارٹی یا بڑا بھائی رہی ہے۔ پارٹی کی کور کمیٹی کی میٹنگ میں فیصلہ لیا گیا تھا کہ بہار میں جے ڈی یو ویسے ہی بڑے کردار میں رہے گی جیسے کہ دہلی میں بی جے پی رہتی ہے۔

 

 
First published: Jun 04, 2018 07:53 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading