ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اگستا ویسٹ لینڈ معاملہ: بچولیے کرشچین مشیل نے لیا ای ڈی سے سونیا گاندھی کا نام لیا: بی جے پی کا الزام

ای ڈی نےدہلی کے پٹیالہ ہاوس کورٹ سے کہا ہے کہ مشیل نےاٹلی کی خواتن کے بیٹےکے بارے میں بتایا ہے۔ ساتھ ہی یہ بھی بتایا ہے کہ کیسے وہ ملک کا آئندہ وزیراعظم بننے جارہا ہے۔

  • Share this:
اگستا ویسٹ لینڈ معاملہ: بچولیے کرشچین مشیل نے لیا ای ڈی سے سونیا گاندھی کا نام لیا: بی جے پی کا الزام
ای ڈی نےکہا ہےکہ کرشچین مشیل نے سونیا گاندھی کا نام لیا ہے۔

اگستا ویسٹ لینڈ معاملے میں مبینہ بچولیے کرشچین مشیل کی ای ڈی حراست کو 7 دنوں کے لئے بڑھا دیا گیا ہے۔ بی جے پی کے مطابق  اپنے بیان میں کرشچین مشیل نے یوپی اے کی چیئرپرسن سونیا گاندھی کا نام لیا ہے۔ انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) نے ہفتہ کو دہلی کی پٹیالہ ہائی کورٹ کو بتایا کہ کرشچین مشیل نے سونیا گاندھی کا نام لیا ہے۔ حالانکہ ای ڈی نے کہا کہ ابھی یہ واضح نہیں ہے کہ مشیل نے سونیا گاندھی کا نام کس ضمن میں لیا ہے۔


مرکزی وزیرپرکاش جاوڈیکرنے پریس کانفرنس کرکے الزام لگایا 'ای ڈی کے مطابق مشیل نے مسیز گاندھی کا نام لیا ہے۔ پہلے صرف اے پی اورفیملی کی بات ہوتی تھی، لیکن اب مشیل کی طرف سے کئی نام سامنے آئے ہیں۔ سبھی ثبوت ایک پارٹی اورایک فیملی کی طرف اشارہ کررہے ہیں۔ اس گھوٹالے کی اصلی کہانی سامنے آرہی ہے'۔


ای ڈی نے پٹیالہ ہاوس کورٹ میں کہاہے کہ کرشچین مشیل نے اس بات کی وضاحت کی ہےکہ کیسے ایچ اے ایل کو ڈیل سے ہٹا دیا گیا تھا اوراس کے بعد ٹاٹا کو سودا دے دیا گیا تھا۔ ساتھ ہی ای ڈی نے مشیل کے وکیل کے داخلے پربھی پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ ای ڈی نے کہا ہے کہ مشیل کوباہرسے سکھایا جاریا ہے۔


اس کے ساتھ ہی ای ڈی نے دہلی کے پٹیالہ ہاوس کورٹ کوکہا ہے کہ مشیل نے اٹلی کی خواتن کے بیٹے کے بارے میں بتایا ہے۔ ساتھ ہی یہ بھی بتایا ہے کہ کیسے وہ ملک کا آئندہ وزیراعظم بننے جارہا ہے۔



مشیل کے وکیل ایلجوکے جوسف نے عدالت میں ای ڈی کے اس دعوے پرکہ مشیل کوباہرسے کچھ سکھایا جارہا ہے، پراپنی صفائی دی ہے۔ ایلجوکے جوسف نے کہا کہ ہم اس سے انکارنہیں کررہے ہیں کہ انہوں نے (کرشچین مشیل نے) ہمیں کاغذات سونپے تھے، لیکن اس میں ای ڈی کا قصورہے کہ انہوں نے ایسا ہونے دیا۔

دوسری طرف ای ڈی کے ذریعہ عدالت میں دی گئی اس اطلاع کے بعد کانگریس نے پلٹ وارکیا ہے۔ کانگریس کے لیڈرآرپی این سنگھ نے کہا کہ مشیل پرایک خاندان کا نام لینے کا دباو بنایا گیا ہے۔ آخرچوکیدارسرکاری ایجنسیوں پرایک خاندان کا نام لینے کے لئے دباو کیوں بنارہی ہے؟ بی جے پی کے اسکرپٹ رائٹراوورٹائم کام کررہے ہیں۔





مشیل کرشچین کے وکیل الجوکے جوسف نے عدالت کوبتایا کرشچین مشیل کے پاس کچھ سوال تھے۔ ساتھ ہی قانونی ردعمل کیسے دی جانی چاہئے۔ انہوں نے ہمیں کچھ دینے کی کوشش کی۔ ہم نے یہ نہیں دیکھا کہ وہ یہ کیا تھا۔ یہ فوراً بتایا گیا کہ وہ ہمیں ایک کاغذ اورہم سے چھین لیا گیا۔
First published: Dec 29, 2018 06:52 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading