உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ڈیٹا بریچ پر بی جے پی نے گھیراؤ کیا تو ڈلیٹ ہوا کانگریس کا آفیشیل ایپ

    راہل گاندھی اور پی ایم مودی کی کریئٹو تصویر

    راہل گاندھی اور پی ایم مودی کی کریئٹو تصویر

    وزیر اعظم نریندر مودی پر 'نمو ایپ'کے زریعے ڈیٹا بریچ کا الزام لگانے والی کانگریس خود اس معاملے میں پھنستی نظر آرہی ہے۔بی جے پی کے سوشل میڈیا ہیڈ مت مالویہ کے ٹویٹ کے بعد کانگریس کا ایپ پلے اسٹور سے ڈلیٹ ہو گیا ہے۔حالانکہ یہ صاف نہیں ہوا کہ اسے خود کانگریس نے ہتایا ہے یا کوئی دیگر تکنیکی کی وجہ ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی۔وزیر اعظم نریندر مودی پر 'نمو ایپ'کے زریعے ڈیٹا بریچ کا الزام لگانے والی کانگریس خود اس معاملے میں پھنستی نظر آرہی ہے۔بی جے پی کے سوشل میڈیا ہیڈ امت مالویہ کے ٹویٹ  کے بعد کانگریس کا ایپ پلے اسٹور سے ڈلیٹ ہو گیا ہے۔حالانکہ یہ صاف نہیں ہوا کہ اسے خود کانگریس نے ہٹایا ہے یا کوئی دیگر تکنیکی کی وجہ سے ہٹا ہے۔امت مالویہ نے ٹویٹ کرکے الزام لگایا تھا کہ کانگریس اپنی آفیشیل ایپ استعمال کرنے والے یوزرس کا ڈیٹاسنگا پور بھیجتی ہے۔مالویہ نے ٹویٹ کیا "میرا نامراہل گاندھی ہے۔میں ہندستان کی سب سے پرانی سیاسی پارٹی کا صدر ہوں۔جب آپ ہماری آفیشیل ایپ پر لاگ ان کرتے ہیں تو میں آپ کی ساری جانکاری اپنے دوستوں کو سنگا پور بھیجتا ہوں"۔

      واضح ہو کہ اتوار کو راہل گاندھی نےپی ایم مودی پر الزام لگایاتھا کہ وہ ان کی نمو ایپ پر لاگ ان کرنے والوں کا ڈیٹا امریکہ بھیجا جاتا ہے۔راہل گاندھی نے یہ بات فرینچ ریسرچ ایلیٹ ایلڈرسن کے حوالے سے کہی۔جنہوں نے الزام لگایا تھا کہ جن لوگوں نے بھی نریندر مودی ایپ کو ڈاؤن لوڈ کیا ان سے جڑی جانکارکو یوزر کی  بغیر اجازت کے یو ایس کی کمپنی "کلیور ٹیپ "کو دے دیا جاتا ہے۔

      INC-App

       

      امت مالویہ نے اگلے ٹویٹ میں لکھا "غیر اعلانیہ اور نا معلوم والیئنٹرس کو آپ کا ڈیٹا دینے کے معاملے میں کانگریس کوپورے مارکس"۔

       





      انہوں نے ایک دیگر ٹویٹ میں لکھا کہ "سونیا گاندھی کے پوری پاور کوئی جواب دہی نہیں "سے ترغیب پاکر کانگریس آپ کا کانگریس آپ کا پورا ڈیٹا لے لیگی اور کیمبرج اینالٹیکا جیسی تنظیموں سے شیئر کرے گی۔لیکن وہ اس کی کوئی ذمہ داری نہیں لے گی۔ان کی اپنی پالیسی تو ایسا ہی کہتی ہیں"۔








      بی جے پی اور کانگریس مسلسل ایک دوسرے پر کیمبرج اینالٹیکا کی خدمات کا استعمال کرنے کا الزام لگا رہے ہیں۔بی جے پی نے کانگریس پر الزسام لگایا تھا کہ اس نے گجرات انتخابات کو متاثر کرنے کیلئے برطانیہ اینالٹیکا کی خدمات لی ہیں۔وہیں کانگریس نے اس کو خارج کرتے ہوئے کہانکہ کیا بی جے پی برطانیہ اینالٹیکا اور ہندستان میں اس کی پارٹنر اوویلینو بزنیس انٹیلیجینس کے خلاف ایف آئی آر درج کریگی۔وہیں راہل گاندھی نے اس معاملے پر کہا کہ مودی حکومت عراق میں مارے گئے 39 ہندستانیوں کے معاملے سے لوگوں کا دھیان بھٹکانا چاہتی ہے۔

      واضح ہو کہ ہندستان نے کیمبرج اینالٹیکا کو نوٹس بھیجا ہت اور انہیں اپنے کلائنٹ اور ڈیٹا سور س کا نام بتانے کیلئے 31 مارچ تک کا وقت دیا ہے۔فرم کے خلاف جس طرح کی جانچ برطانیہ اور امریکہ میں ہو رہی ہے اسی طرح کی جانچ ہندستان میں بھی ہو سکتی ہے۔



      First published: