உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ونے کٹیار کا جوابی حملہ، کہا مسلمان چلے جائیں پاکستان۔ بنگلہ دیش، لایا جائے بل

    بھارتیہ جنتا پارٹی کے رہنما اور بجرنگ دل کے بانی صدر ونے کٹیار: تصویر، ای ٹی وی، نیوز ۱۸۔

    بھارتیہ جنتا پارٹی کے رہنما اور بجرنگ دل کے بانی صدر ونے کٹیار: تصویر، ای ٹی وی، نیوز ۱۸۔

    بھارتیہ جنتا پارٹی کے رہنما اور بجرنگ دل کے بانی صدر ونے کٹیار نے رکن پارلیمنٹ اسدالدین اویسی کو جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایک قانون بنایا جانا چاہئے جس میں ایسے لوگوں کے لئے سزا کا التزام ہو جو وندے ماترم نہیں گاتے ہیں اور جو قومی پرچم کی توہین کرتے ہیں۔

    • Share this:
      نئی دہلی۔ بھارتیہ جنتا پارٹی کے رہنما اور بجرنگ دل کے بانی صدر ونے کٹیار نے ایک بار پھر متنازعہ بیان دیا ہے۔ آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے صدر اور حیدرآباد سے رکن پارلیمنٹ اسدالدین اویسی کو جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایک قانون بنایا جانا چاہئے جس میں ایسے لوگوں کے لئے سزا کا التزام ہو جو وندے ماترم نہیں گاتے ہیں اور جو قومی پرچم کی توہین کرتے ہیں۔

      کٹیار نے مزید کہا کہ جو لوگ پاکستانی جھنڈے لہراتے ہیں انہیں سزا دی جانی چاہئے۔ جب مذہب کی بنیاد پر ہی ملک اپنائے جا رہے ہیں تو مسلمانوں کو اس ملک میں نہیں رہنا چاہئے۔ بلکہ ایسے افراد کو پاکستان یا بنگلہ دیش چلے جانا چاہئے۔ ایسے لوگوں کے لئے قانون آنا چاہئے۔ ایسے لوگ ہندوستان میں کیوں رہیں؟ کٹیار نے ان سب سے متعلق قانون کا مطالبہ کیا ہے۔

      بتا دیں کہ منگل کو اویسی نے کہا تھا کہ ہندوستان میں ایک ایسا قانون لانا چاہئے، جس کے ذریعہ ان لوگوں پر سخت کارروائی کرنی چاہئے جو ہندوستانی مسلمانوں کو پاکستانی کہتے ہیں۔ اس طرح کے لوگوں کو کم سے کم تین سال تک کی سزا دی جانی چاہئے۔
      First published: