ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

بی جے پی رکن پارلیمنٹ ساکشی مہاراج کو پاکستان سے آیا فون، ملی جان سے مارنے کی دھمکی

دھمکی بھرے فون کال آنے کے بعد بی جے پی رکن پارلیمنٹ نے اناو کے ایس پی کو خط لکھ کر شکایت کی ہے۔

  • Share this:
بی جے پی رکن پارلیمنٹ ساکشی مہاراج کو پاکستان سے آیا فون، ملی جان سے مارنے کی دھمکی
ساکشی مہاراج کی فائل فوٹو

اناو۔ بی جے پی (BJP) رکن پارلیمنٹ ساکشی مہاراج (Sakshi Maharaj کو ایک پاکستانی (Pakistan) نمبر سے فون کر جان سے مارنے کی دھمکی دی گئی ہے۔ دھمکی بھرے فون کال آنے کے بعد بی جے پی رکن پارلیمنٹ نے اناو کے ایس پی کو خط لکھ کر شکایت کی ہے۔ رکن پارلیمنٹ کے مطابق، انہیں پیر کی شام 04.24 بجے اور دوبارہ 04.26 بجے پاکستان کے نمبر  (+923151225989) سے فون کر دھمکی دی گئی۔ فون کرنے والے شخص نے کہا کہ ان کا گھر بم سے اڑا دے گا۔ رکن پارلیمنٹ نے کوتوالی میں دھمکی دینے والے نامعلوم شخص کے خلاف رپورٹ درج کرائی ہے۔


رکن پارلیمنٹ ساکشی مہاراج نے بتایا کہ 923151225989 نمبر سے ان کے موبائل پر فون کرنے والے نے کہا ’ تم نے ہمارے دوست محمد غفار کو پکڑوا کر اپنی موت مول لے لی ہے۔ دس دن کے اندر تمہیں اور تمہارے ساتھیوں کو جان سے مار دیں گے۔ میرے مجاہدین کی تم پر چوبیسیوں گھنٹے نظر ہے جو موقع ملتے ہی تمہیں بھگوان کے پاس بھیج دیں گے۔ تمہارے پروگرام کی جانکاری ہمارے لوگوں کو رہتی ہے‘۔



رکن پارلیمنٹ نے اپنی شکایت میں یہ بھی کہا ہے کہ دھمکی دینے والے نے بھارتیہ جنتا پارٹی اور راشٹریہ سویم سیوک سنگھ کے رہنماوں کا بھی نام لیا۔ گالی گلوج کرنے کے ساتھ اور بھی غلط باتیں سنائیں۔ اپنے شکایتی مکتوب میں ساکشی مہاراج نے وزیر اعظم نریندر مودی، یوپی کے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ ، سنگھ سربراہ موہن بھاگوت کے نام سے دھمکی بھری باتوں کا ذکر کیا۔

پہلے بھی مل چکی ہے دھمکی
غور طلب ہے کہ یہ پہلا موقع نہیں ہے جب رکن پارلیمنٹ ساکشی مہاراج کو جان سے مارنے کی دھمکی ملی ہے۔ اس سے پہلے  2017 اور 2018 میں بھی ساکشی مہاراج کو جان سے مارنے کی دھمکی مل چکی ہے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Aug 11, 2020 12:22 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading