ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کالے دھن کے لئے مرکزی حکومت کی نئی اسکیم، دینا ہوگا بھاری بھرکم ٹیکس

اب حکومت نے غیر اعلانیہ رقم پر ایک نئی اسکیم کا اعلان کرتے ہوئے پارلیمنٹ میں انکم ٹیکس ترمیمی بل پیش کیا ہے۔

  • News18.com
  • Last Updated: Nov 28, 2016 03:54 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کالے دھن کے لئے مرکزی حکومت کی نئی اسکیم، دینا ہوگا بھاری بھرکم ٹیکس
علامتی تصویر

نئی دہلی۔ کالے دھن پر چوٹ کے لئے نافذ کردہ نوٹ بندی کے بعد حکومت کی جانب سے نئے نئے قوانین جاری کئے جا رہے ہیں۔ اب حکومت نے غیر اعلانیہ رقم پر ایک نئی اسکیم کا اعلان کرتے ہوئے پارلیمنٹ میں انکم ٹیکس ترمیمی بل پیش کیا ہے۔ 8 نومبر کے بعد بینکوں میں جمع کالے دھن کے لئے ایسی اسکیم کا اعلان کیا گیا ہے جس میں 50 فیصد دولت حکومت کے پاس پہنچے گی۔


وزیر اعظم غریب بہبود کی منصوبہ بندی 2016


اس کے تحت 8 نومبر کے بعد بینکوں میں جمع غیر اعلانیہ رقم پر 30 فیصد ٹیکس لگے گا۔ جمع رقم پر 10٪ جرمانہ بھی لگے گا۔ اس کے علاوہ 33٪ وزیراعظم غریب بہبود سیس بھی لگے گا، سیس صرف ٹیکس کی رقم پر لگے گا۔ مجموعی طور پر اس اسکیم کے تحت تقریبا 50٪ رقم حکومت کو جائے گی۔ 25٪ رقم خاص ڈیپازٹ اسکیم میں جمع کی جائے گی۔ اس اسکیم میں جمع رقم کا خاص استعمال ہوگا۔ آبپاشی، ہاؤسنگ، ٹوائلٹ، انفراسٹرکچر، پرائمری تعلیم اور صحت کے شعبہ میں اس پیسے کا استعمال ہوگا۔


بتا دیں کہ نوٹ بندی کے اعلان کے بعد سے ہی ایسی خبریں ہیں کہ بڑے پیمانے پر کالے دھن مختلف لوگوں کے اکاؤنٹ میں جمع کئے جا رہے ہیں۔ کالا دھن رکھنے والے اپنا پیسہ دوسروں کو اکاونٹ میں جمع کرنے کو دے رہے ہیں اور اس کے بدلے انہیں کمیشن دے رہے ہیں۔ خاص طور پرجن دھن کھاتوں میں اس طرح کی رقم جمع کرائی گئی ہے۔ اب تک یہ تعداد 26 ہزار کروڑ تک پہنچ گئی ہے۔
First published: Nov 28, 2016 03:54 PM IST