ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

نوئیڈا میں نمازپرپابندی کومایاوتی نے 'یکطرفہ اورغیرذمہ دارانہ کارروائی' قراردیا

بی ایس پی سربراہ نے کہا کہ یہ خدشہ مزید مضبوط ہوتا ہے کہ الیکشن کےوقت اس طرح کے مذہبی تنازعات پیدا کرکے بی جے پی اپنی حکومت کی خامیوں سے لوگوں کی توجہ ہٹانا چاہتی ہے۔ 

  • Share this:
نوئیڈا میں نمازپرپابندی کومایاوتی نے 'یکطرفہ اورغیرذمہ دارانہ کارروائی' قراردیا
بی ایس پی سربراہ مایاوتی: فائل فوٹو

نوئیڈا سیکٹر-58 میں نمازپڑھنے کے معاملے میں بی ایس پی سربراہ مایاوتی نے بدھ کو  پولیس کارروائی کوغلط اوریکطرفہ بتایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اترپردیش کی بی جے پی حکومت کے پاس اگرکوئی پالیسی ہے توتمام اضلاع میں نافذ کریں۔ بغیربھید بھاو کے یہ قواعد وضوابط تمام اضلاع میں نافذ کیوں نہیں ہوتا؟ انہوں نے کہا کہ یکطرفہ کارروائی انتہائی غیرذمہ دارانہ ہے۔


بی ایس پی سربراہ مایاوتی نے کہا کہ نوئیڈا میں اس مقام پرفروری 2013 سے ہی جمعہ کی نمازمسلسل ہورہی ہے۔ اب الیکشن کے وقت اس پرپابندی لگانے کا کیا مطلب ہے۔ انہوں نے کہا کہ پہلے یہ کارروائی کیوں نہیں کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی حکومت کی نیت اورپالیسی دونوں پرہی انگلی اٹھنا اورمذہبی بھید بھاوکا الزام عائد ہونا فطری ہے۔ ساتھ ہی یہ خدشہ بھی مضبوط ہوتا ہےکہ الیکشن کے وقت اس طرح کے مذہبی تنازعہ پیدا کرکے بی جے پی اپنی حکومت کی خامیوں سے لوگوں کی توجہ ہٹانا چاہتی ہے۔


مایاوتی نے کہا کہ جمعہ کی نمازکے متعلق نوئیڈا سیکٹر 58 واقع 23 پرائیویٹ کمپنیوں کو بھی نوٹس جاری کرنے کی کارروائی غلط اورغیرذمہ دارانہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی حکومت کی ایسی کارروائی سے واضح ہے کہ حال ہی میں پانچ ریاستوں میں ہوئے اسمبلی انتخابات میں زبردست شکست سے بی جے پی کے سینئرلیڈران کتنا گھبرائے ہوئے ہیں۔ اب اسی گھبراہٹ سے غلط اوریکطرفہ فیصلے لے رہے ہیں۔

First published: Dec 26, 2018 05:32 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading