உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Budget 2022: کیا اس سال سے موبائل فون اور ٹی وی ہوں گے سستے؟ جانیے مکمل تفصیلات

    ویسٹنگ ہاؤس ٹی وی کے انڈیا برانڈ لائسنس یافتہ سپر پلاسٹرونکس پرائیویٹ لمیٹیڈ (SPPL) کے نائب صدر پلاوی سنگھ نے کہا کہ ’بجٹ 23-2022 کے ضمن میں ہم امید کرتے ہیں کہ حکومت تمام کنزیومر الیکٹرانکس پر جی ایس ٹی کو کم کرے۔

    ویسٹنگ ہاؤس ٹی وی کے انڈیا برانڈ لائسنس یافتہ سپر پلاسٹرونکس پرائیویٹ لمیٹیڈ (SPPL) کے نائب صدر پلاوی سنگھ نے کہا کہ ’بجٹ 23-2022 کے ضمن میں ہم امید کرتے ہیں کہ حکومت تمام کنزیومر الیکٹرانکس پر جی ایس ٹی کو کم کرے۔

    ویسٹنگ ہاؤس ٹی وی کے انڈیا برانڈ لائسنس یافتہ سپر پلاسٹرونکس پرائیویٹ لمیٹیڈ (SPPL) کے نائب صدر پلاوی سنگھ نے کہا کہ ’بجٹ 23-2022 کے ضمن میں ہم امید کرتے ہیں کہ حکومت تمام کنزیومر الیکٹرانکس پر جی ایس ٹی کو کم کرے۔

    • Share this:
      بجٹ 2022 کی توقعات (Budget 2022 Expectations): بجٹ کا موسم ملک بھر کے مختلف شعبوں کے لیے نئی امیدیں لاتا ہے۔ تنخواہ دار متوسط ​​طبقے، اسٹارٹ اپس اور بینکوں سے لے کر خوردہ فروشوں اور فنٹیک فرموں تک بجٹ سیشن پورے ملک میں ہر ایک کے لیے اہم ہے۔ اس سال وزیر خزانہ نرملا سیتا رمن (Nirmala Sitharaman) 1 فروری بروز منگل کو 2022 کا مرکزی بجٹ بغیر کاغذ فارمیٹ میں پیش کرنے والی ہیں۔

      جیسا کہ اوپر کہا گیا ہے کہ بجٹ ہر ایک کے لیے امید لاتا ہے۔ ریٹیل سیکٹر بھی مختلف نہیں ہے۔ اگرچہ خوردہ سیکٹر کے مختلف علاقوں میں مختلف مطالبات ہیں، لیکن الیکٹرانک سیکٹر میں بڑی تبدیلی دیکھنے کو مل رہی ہے۔ ہندوستان ٹائمز کی ایک رپورٹ کے مطابق حکومت کنزیومر الیکٹرانکس اور موبائل فون کے پرزوں یا ذیلی حصوں پر کسٹم ڈیوٹی میں ترمیم کرنے جا رہی ہے تاکہ مقامی مینوفیکچرنگ کی حوصلہ افزائی کی جا سکے۔

      اگرچہ حکومت کے اس اقدام سے بجٹ 2022 کے دوران مخصوص علاقے کو مدد ملنے کا امکان ہے، لیکن صارفین کے لیے الیکٹرانک مصنوعات کا کاروبار کرنے والے خوردہ فروشوں کے دیگر مطالبات بھی ہیں۔

      ویسٹنگ ہاؤس ٹی وی کے انڈیا برانڈ لائسنس یافتہ سپر پلاسٹرونکس پرائیویٹ لمیٹیڈ (SPPL) کی نائب صدر پلاوی سنگھ نے کہا کہ ’بجٹ 23-2022 کے ضمن میں ہم امید کرتے ہیں کہ حکومت تمام کنزیومر الیکٹرانکس پر جی ایس ٹی کو کم کرے تاکہ سابقہ اور آج کے دور میں تفاوت کو کم کیا جا سکے۔ ہندوستان میں صارفین کی کیٹیگریز کے طور پر کنزیومر الیکٹرانکس کو سبھی کی ضروریات کے طور پر ٹیگ کیا جاتا ہے‘۔
      انہوں نے کہا کہ بجٹ 2022 کے دوران ٹیلی ویژن پر جی ایس ٹی میں کٹوتی ضروری ہے۔ صرف 32 انچ تک کے ٹیلی ویژنوں پر 18 فیصد کی موجودہ شرح کے ساتھ ٹیلی ویژن کی ایک وسیع رینج ہے جو 28 فیصد کی شرح کے دائرے میں آتی ہے۔ سنگھ نے مزید کہا کہ 43 انچ تک کے ٹیلی ویژنوں میں بھی شرح میں 18 فیصد تک کمی سے ایک بہت بڑی راحت ملے گی کیونکہ ہندوستان میں صارفین کی اکثریت 32 سے 43 کی حد میں آتی ہے۔

      ہندوستان میں بلاپنکٹ کے خصوصی برانڈ لائسنس یافتہ سپر پلاسٹرونکس پرائیویٹ لمیٹیڈ کے سی ای او اونیت سنگھ مارواہ نے کہا کہ ’جب ہم کورونا کی ایک اور لہر سے گزر رہے ہیں، تو یہ اس بات کا اشارہ ہے کہ آتما نربھار بھارت کتنا اہم ہے۔ ہندوستانی مینوفیکچرنگ اور ایم ایس ایم ایز (MSMEs) کو فروغ دینے کے لیے ہمیں ایک مستحکم جی ایس ٹی ٹیکس سلیب کی ضرورت ہے۔

      کوئی بھی پروڈکٹ 18 فیصد سلیب سے اوپر نہیں ہونا چاہیے اور انہیں اب بازار کی ضروریات کو بہتر بنانے کے لیے صارفیت کی حوصلہ افزائی کرنی چاہیے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: