உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Budget 2022: وزیر خزانہ نرملا سیتارامن سے نیٹ ورک 18 کے ایڈیٹر ان چیف راہول جوشی کا خصوصی انٹرویو

    وزیر خزانہ نرملا سیتارامن (Nirmala Sitharaman)

    وزیر خزانہ نرملا سیتارامن (Nirmala Sitharaman)

    وزیر خزانہ نرملا سیتارامن نے راہول جوشی سے خصوصی انٹرویو کے دوران کہا کہ انفراسٹرکچر میں عوامی سرمایہ کاری سے ترقی کے امکانات زیادہ ہے اور اس میں لوگ سرمایہ کی کثیر مقدار کی امید ہے۔ سیتارامن نے کہا کہ انفراسٹرکچر میں عوامی سرمایہ کاری سے ایک نئے دور کا ہوگا۔

    • Share this:
      وزیر خزانہ نرملا سیتارامن (Nirmala Sitharaman) نیٹ ورک 18 کے ایڈیٹر ان چیف راہول جوشی (Rahul Joshi) سے انٹرویو کے دوران کہا ہے اس موڑ پر معیشت کو مضبوط تعاون کی ضرورت ہے۔ سیتارامن نے کہا کہ برآمدات بڑھ رہی ہیں۔ نجی شعبے کی سرمایہ کاری کے لیے برآمدی امکانات موجود ہیں۔ نئی صلاحیتیں ضرور آنے والی ہیں۔ ملک میں ایف ڈی آئی اب بھی بڑے پیمانے پر آ رہی ہے۔ اس لیے کمپنیاں ایف ڈی آئی کے ساتھ شراکت داری پر خوش ہیں اور وہ بڑھ رہی ہیں۔ پی ایل آئی اسکیم بھی اس بات کی نشاندہی کرتی ہے۔

      وزیر خزانہ نے کہا کہ گذشتہ سال کے مختص کیپیکس کا 65 تا 68 فیصد استعمال ہوا۔ عالمی وبا کورونا وائرس (Covid-19) کے نئے ویرینٹ اومی کرون (Omicron) نے پہلی سہ ماہی کے اخراجات کو بڑھا دیا ہے۔ دوسری لہر اور اومی کرون کے باوجود 68 فیصد تک پہنچنے سے ہمارے لیے مطلوبہ کیپیکس کو حاصل کرنے میں تاخیر کا اثر پڑا ہے۔ ایسا نہیں ہونا چاہیے۔

      انھوں نے کہا کہ ٹیکس لگانے کے بارے میں سیتا رمن نے کہا کہ ٹیکس نظام میں استحکام اور پیشن گوئی فراہم کرنا ممکن ہے۔ ہم غیر یقینی کے عناصر کو نہیں لانا چاہتے تھے۔ اگر آپ ٹیکس کے استحکام اور پیشین گوئی پر نظر ڈالتے ہیں، تو آپ کم از کم اس بات کو یقینی بنا رہے ہیں کہ جن لوگوں نے منصوبہ بندی کی ہے وہ اس بات کو یقینی بنا رہے ہیں کہ یہ غیر متاثر رہے۔ سیتارامن نے کہا کہ میرے خیال میں عالمی سطح پر تمام معیشتیں افراط زر سے پریشان ہیں۔ اس سے منصوبہ بندی متاثر ہوتی ہے۔

      وزیر خزانہ نرملا سیتارامن نے راہول جوشی سے خصوصی انٹرویو کے دوران کہا کہ  انفراسٹرکچر میں عوامی سرمایہ کاری سے ترقی کے امکانات زیادہ ہے اور اس میں لوگ سرمایہ کی کثیر مقدار کی امید ہے۔ سیتارامن نے کہا کہ انفراسٹرکچر میں عوامی سرمایہ کاری سے ایک نئے دور کا ہوگا۔ ہم نے سوچا کہ اگر معیشت اچھی چلتی ہے، تو انفرا پر خرچ کرنے کا اثر پیسہ دینے کے برعکس زیادہ ہوتا ہے۔ ہم چاہتے تھے کہ زیادہ سے زیادہ سرمایہ کاری ہو جس کا اثر معیشت پر پڑے گا۔ اس موڑ پر معیشت کو مضبوط حمایت کی ضرورت ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: