உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مودی کابینہ میں ردوبدل کل، کچھ نئے چہروں کو ملے گا موقع، 75 سے اوپر والوں کی چھٹی

    نئی دہلی۔  کابینہ میں کل بھاری ردوبدل ہونے کا امکان ہے۔ کچھ نئے چہرے اس میں شامل ہو سکتے ہیں تو کچھ کا عہدہ بڑھایا جا سکتا ہے۔

    نئی دہلی۔ کابینہ میں کل بھاری ردوبدل ہونے کا امکان ہے۔ کچھ نئے چہرے اس میں شامل ہو سکتے ہیں تو کچھ کا عہدہ بڑھایا جا سکتا ہے۔

    نئی دہلی۔ کابینہ میں کل بھاری ردوبدل ہونے کا امکان ہے۔ کچھ نئے چہرے اس میں شامل ہو سکتے ہیں تو کچھ کا عہدہ بڑھایا جا سکتا ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی۔  کابینہ میں کل بھاری ردوبدل ہونے کا امکان ہے۔ کچھ نئے چہرے اس میں شامل ہو سکتے ہیں تو کچھ کا عہدہ بڑھایا جا سکتا ہے۔ ایسی قیاس آرائی بھی ہے کہ خراب کارکردگی کی وجہ سے کچھ موجودہ وزراء کی رخصتی بھی ہو سکتی ہے۔ کابینہ میں ردوبدل کے قیاس گزشتہ تین چار ہفتے سے لگائے جا رہے تھے لیکن وزرا کے کام کاج کا جائزہ لینے کے لئے 30 جون کو وزیر اعظم کی جانب سے بلائی گئی کابینہ کی میٹنگ کے بعد پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس سے پہلے کابینہ میں ردوبدل کو تقریبا طے مانا جا رہا ہے۔


      پارلیمنٹ کا مانسون اجلاس 18 جولائی سے شروع ہو رہا ہے۔ تقریبا چار گھنٹے جاری رہنے والے اس میراتھن اجلاس میں ہر وزارت کی جانب سے گزشتہ دو سال کے اپنے کام کاج کا حساب و کتاب پیش کرنے کے ساتھ ساتھ مستقبل کے منصوبوں کی تفصیلات بھی دی گئی تھیں ۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں وزیر اعظم نے مختلف وزارتوں سے سرکاری منصوبوں کے لئے مختص فنڈز کے خرچ کی معلومات حاصل کی اور انہیں اس بات کویقینی بنانے کے لئے کہا تھا کہ ان سرکاری منصوبوں کا فائدہ عوام تک پہنچے۔ وزیر اعظم نے اس کے ساتھ ہی عام انتخابات میں بھارتیہ جنتا پارٹی کی جانب سے انتخابی منشور میں کئے گئے وعدوں کو سرکاری اسکیموں کے ذریعے لوگوں تک پہنچانے میں مختلف وزارتوں کے کردار کا جائزہ بھی لیا تھا۔


      ایسی خبر ہے کہ کابینہ میں ردوبدل کل ہو سکتا ہے۔ اس کے پیچھے اہم وجہ کئی ریاستوں میں ہونے والے اسمبلی انتخابات مانی جا رہی ہے۔ اسے وزیر اعظم کی طرف سے پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس کے پہلے حکومت کی تصویر کو بہتر بنانے کی کوشش کے طور پر بھی دیکھا جا رہا ہے۔ موجودہ وقت میں مرکزی کابینہ میں وزیر اعظم کو ملا کر 64 وزیر ہیں۔ اس میں 27 کابینہ کی سطح کے 12 آزاد چارج والے اور 25 وزیرمملکت ہیں۔


      ذرائع کے مطابق کابینہ کے موجودہ ردوبدل میں چار سرفہرست وزراء وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ، وزیر خزانہ ارون جیٹلی، وزیر خارجہ سشما سوراج اور وزیر دفاع منوهر پاریکر کے محکموں میں کوئی تبدیلی کا امکان نہیں ہے۔ ایسا اندازہ ہے کہ 75 سال سے زائد کی عمر والے وزراء کی چھٹی ہوسکتی ہے۔ کھیل اور نوجوانوں کے امور کے وزیر رہنے والے مسٹر سربانند سونووال کے آسام کا وزیر اعلی بن جانے کے بعد ان کی وزارت میں وزیر کا عہدہ خالی ہے۔ اسے بھی بھرا جانا ہے ایسے میں کابینہ میں ردوبدل کو تقریبا طے مانا جا رہا ہے۔
      وزیر اعظم نے کابینہ میں سابقہ ​​ردوبدل نومبر 2014 میں کیا تھا جب مسٹر سریش پربھو کو ریلوے کے وزیر اور مسٹر منوہر پاریکر کو وزیر دفاع کے طور پر اس میں شامل کیا گیا تھا۔

      First published: