ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کیگ کی رپورٹ راجیہ سبھا میں پیش، رافیل کے نئے سودے سے 2.86 فیصد کی بچت ہوئی: کیگ

رافیل جنگی طیارہ سودے سے متعلق کمپٹرولر اینڈ آڈیٹر جنرل (سی اے جی) کی رپورٹ بدھ کو راجیہ سبھا میں پیش کردی گئی

  • UNI
  • Last Updated: Feb 13, 2019 12:54 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کیگ کی رپورٹ راجیہ سبھا میں پیش، رافیل کے نئے سودے سے 2.86 فیصد کی بچت ہوئی: کیگ
رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ نئے سودے سے 2.86 فیصد کی بچت ہوئی ہے۔

تنازعات سے گھرے رافیل جنگی طیارہ سودے سے متعلق کمپٹرولر اینڈ آڈیٹر جنرل (سی اے جی) کی رپورٹ بدھ کو راجیہ سبھا میں پیش کردی گئی۔ ایوان کی کارروائی شروع ہونے کے بعد چیرمین ایم وینکیانائیڈو نے متعلقہ وزرا کو اپنی وزارت سے متعلق کاغذات ایوان کی میز پر پیش کرنے کے لئے کہا۔ وزیر مملکت برائے خزانہ پی رادھاکرشنن نے ’ہندوستانی فضائیہ میں سرمایہ کا حصول‘ سے متعلق کیگ کی رپورٹ ایوان کی میز پر رکھی۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ نئے سودے سے 2.86 فیصد کی بچت ہوئی ہے۔ ہندوستانی فضائیہ میں سرمایہ کے حصول کے بارے میں پارلیمنٹ میں رکھی گئی یہ پورٹ دو حصوں میں ہے۔ پہلے حصہ میں اس بات کا تجزیہ کیا گیا ہے کہ ترقی پسند اتحاد (یو پی اے) حکومت کے وقت شروع کئے گئے خریداری کے عمل میں حتمی سمجھوتہ کیوں نہیں ہوسکا۔ دوسرے حصہ میں موجودہ سودے کے عمل اور دیگر باتوں کا تجزیہ کیا گیا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پرانے مجوزہ سودے کے مقابلہ میں نئے سودے میں 2.8 فیصد کی بچت ہوئی ہے۔ بہرحال اس میں طیارہ کی قیمت نہیں بتائی گئی ہے۔ سی اے جی کے مطابق پرانے سودے کے مکمل نہ ہونے کے دو اسباب رہے۔

پہلا یہ کافی بڑا آڈر تھا اور تکنالوجی کی منتقلی بھی ہونی تھی اس لئے اس میں زیادہ لیبر فورس کی ضرورت تھی۔ دوسری وجہ بتائی گئی کہ پرانے سودے میں جو 108طیارے ہندستان میں تیار ہونے تھے اس کے لئے رافیل طیارہ بنانے والی کمپنی داسو ایوی ایشن ’کارکردگی کی گارنٹی‘ دینے کے لئے تیار نہیں تھی۔

First published: Feb 13, 2019 12:47 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading