ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کیمبرج انالیٹکا نےکہا "فیس بک سے ہندوستانی ڈیٹا کی چوری نہیں کی"۔

نئی دہلی: سیاسی ڈیٹا انالیسس کمپنی 'کیمبرج انالیٹکا نے 5.62 لاکھ ہندوستانیوں کے ڈیٹا چوری کئے جانے کے الزامات کو مسترد کردیا ہے۔ گرچہ فیس بک نے حال ہی میں اعتراف کیا کہ یہ گھوٹالہ ہندوستان کے 5.62 لاکھ افراد کو متاثر کر سکتا ہے۔

  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کیمبرج انالیٹکا نےکہا
فائل فوٹو

نئی دہلی: سیاسی ڈیٹا انالیسس کمپنی 'کیمبرج انالیٹکا نے 5.62 لاکھ ہندوستانیوں کے ڈیٹا چوری کئے جانے کے الزامات کو مسترد کردیا ہے۔ گرچہ فیس بک نے حال ہی میں اعتراف کیا کہ یہ گھوٹالہ ہندوستان کے 5.62 لاکھ افراد کو متاثر کر سکتا ہے۔ ذرائع کے مطابق فیس بک اور کیمبرج انالیٹکاکے جوابات سے نا مطمئن ہندوستانی حکومت ڈیٹا بیس لیک معاملے میں اضافی تحقیقات کرائے گی۔ حکومت نے 7اپریل تک کیمبرج انالیٹکا سے ڈیٹا لیک معاملے میں جواب طلب کیا تھا۔

سرکاری ذرائع نے کہا کہ کیمبرج انالیٹکا نے فیس سے متعلق ہندوستانیوں کے کسی بھی ڈیٹا کا استعمال کر نے سے انکارکیا ہے۔ اس کمپنی اور فیس بک کے ذریعہ داخلکردہ جوابات میں تضادہے۔حکومت ان دونوں سے مزیدوضاحت طلب کرے گی۔ 'کیمبرج انالیٹکا پر الزام ہے کہ اس نے فیس بک کے کروڑوں صارفین سے متعلق معلومات کا تجزیہ کیا اور اس کا استعمال کئی ممالک میں ان کے سیاسی اثر کو متاثر کرنے کےلئے کیا۔ اس اسکینڈل کے سامنے آنے کے بعد فیس بک کو زبردست تنقید کا سامنا کرنا پڑا ہے، جو دنیا کی اہم سوشل میڈیا کی ویب سائٹ ہے۔ ہندوستان میں اس کے 20کروڑ صارفین ہیں۔

First published: Apr 11, 2018 09:35 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading