உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جفت اور طاق فارمولے کی خلاف ورزی پر ضبط نہیں ہوگی کار، ایک دن میں ایک ہی ایک مرتبہ ہوگا جرمانہ

    نئی دہلی : دہلی میں یکم جنوری سے شروع ہونے طاق اور جفت اسکیم کے تحت قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے کو ایک دن میں صرف ایک مرتبہ ہی دو ہزار روپے کا جرمانہ دینا ہوگا ۔ اسکیم کی تیاریوں کے سلسلہ میں دہلی حکومت اور دہلی پولیس کمشنر کے درمیان ہوئی میٹنگ میں یہ فیصلہ لیا گیا۔ میٹنگ کے بعد حکومت نے اعلان کیا کہ اس اسکیم کے تحت قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے لوگوں کی کاریں ضبط نہیں کی جائیں گی۔

    نئی دہلی : دہلی میں یکم جنوری سے شروع ہونے طاق اور جفت اسکیم کے تحت قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے کو ایک دن میں صرف ایک مرتبہ ہی دو ہزار روپے کا جرمانہ دینا ہوگا ۔ اسکیم کی تیاریوں کے سلسلہ میں دہلی حکومت اور دہلی پولیس کمشنر کے درمیان ہوئی میٹنگ میں یہ فیصلہ لیا گیا۔ میٹنگ کے بعد حکومت نے اعلان کیا کہ اس اسکیم کے تحت قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے لوگوں کی کاریں ضبط نہیں کی جائیں گی۔

    نئی دہلی : دہلی میں یکم جنوری سے شروع ہونے طاق اور جفت اسکیم کے تحت قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے کو ایک دن میں صرف ایک مرتبہ ہی دو ہزار روپے کا جرمانہ دینا ہوگا ۔ اسکیم کی تیاریوں کے سلسلہ میں دہلی حکومت اور دہلی پولیس کمشنر کے درمیان ہوئی میٹنگ میں یہ فیصلہ لیا گیا۔ میٹنگ کے بعد حکومت نے اعلان کیا کہ اس اسکیم کے تحت قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے لوگوں کی کاریں ضبط نہیں کی جائیں گی۔

    • News18
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی : دہلی میں یکم جنوری سے شروع ہونے طاق اور جفت اسکیم کے تحت قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے کو ایک دن میں صرف ایک مرتبہ ہی دو ہزار روپے کا جرمانہ دینا ہوگا ۔ اسکیم کی تیاریوں کے سلسلہ میں دہلی حکومت اور دہلی پولیس کمشنر کے درمیان ہوئی میٹنگ میں یہ فیصلہ لیا گیا۔ میٹنگ کے بعد حکومت نے اعلان کیا کہ اس اسکیم کے تحت قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے لوگوں کی کاریں ضبط نہیں کی جائیں گی۔


      وہیں جفت اور طاق اسکیم کو لے کر دہلی پولیس اور دہلی حکومت کے درمیان جاری لفظی جنگ بھی منگل کو میٹنگ کے بعد ختم ہوگئی ۔ فیصلہ لیا گیا کہ دہلی کو آلودگی سے پاک کرنے کے لئے دہلی حکومت اور دہلی پولیس مل کر اس کی اسکیم کو کامیاب بنانے کی کوشش کرے گی۔


      خیال رہے کہ منگل کی شام دہلی کے پولیس کمشنر بی ایس بسی، دہلی حکومت کے وزیر ٹرانسپورٹ گوپال رائے اور اس سے وابستہ حکام کی میٹنگ ہوئی۔ میٹنگ میں نفاذ کے سلسلہ میں تیاریوں کا جائزہ لیا گیا۔ میٹنگ یہ بھی طے ہوا کہ اگر کوئی شخص اس کی خلاف ورزی کرتے پایا گیا ، تو اسے ایک دن میں صرف ایک مرتبہ ہی دو ہزار روپے کا جرمانہ دینا ہوگا۔ لیکن اگر پھر وہ شخص کسی دوسرے دن اس کی خلاف ورزی کرتا ہے ، تو اس کا پھر چالان کاٹا جائے گا۔


      میٹنگ میں یہ فیصلہ بھی لیا گیا کہ اس کی فارمولے کے دوران 15 دنوں تک قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے لوگوں کی کاریں ضبط نہیں کی جائیں گی۔ دہلی حکومت کا کہنا تھا کہ قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے لوگوں کی کاریں قبضہ کرنے کے لئے حکومت اور دہلی پولیس کو خصوصی اختیارات کی ضرورت ہو گی اور اس میں کافی وقت لگ جائے گا۔


      یہی نہیں دہلی پولیس اور دہلی حکومت کے درمیان اس بات پر بھی اتفاق رائے ہو گیا کہ اسکیم پر نظر رکھنے کے لئے سڑکوں پر تعینات کئے جانے والے سول ڈیفنس کے لوگ آزاد انہ طریقے سے سڑکوں پر تعینات نہیں ہوں گے۔ سڑک پر تعینات یہ لوگ ایس ڈی ایم، محکمہ نقل و حمل کے افسر یا پھر پولیس افسر کے ساتھ وابستہ ہوں گے اور ان کی نگرانی میں کام کریں گے۔ سول ڈیفنس کے کسی بھی اہلکار کو ٹریفک یا کسی شخص کو روکنے کا حق نہیں ہوگا ، جب تک کے ان کے سپروائزر افسر اسے ایسا کرنے کو نہیں کہتے۔


      خیال رہے کہ پندرہ دنوں تک چلنے والی اس اسکیم کیلئے حکومت نے سول ڈیفنس کے پانچ سے چھ ہزار جوان دہلی پولیس کو دینے کا اعلان کیا ہے ۔ اس درمیان حکومت نے بدھ کو دہلی کی سڑکوں پر تعینات ہونے والے تقریبا دس ہزار سول ڈیفنس کے جوانوں کو تربیت دینے کا بھی اعلان کیا ہے۔

      First published: