اپنا ضلع منتخب کریں۔

    یادو سنگھ اثاثہ معاملہ : 14 ٹھكانوں پر سی بی آئی کے چھاپے

    مرکزی جانچ بیورو (سی بی آئی) نے الہ آباد ہائی کورٹ کے حکم پر نوئیڈاڈیولپمنٹ اتھارٹی کے سابق چیف انجینئر یادو سنگھ کے خلاف آج دو معاملے درج کئے اور ریاست کے 14 مختلف ٹھکانوں پر چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

    مرکزی جانچ بیورو (سی بی آئی) نے الہ آباد ہائی کورٹ کے حکم پر نوئیڈاڈیولپمنٹ اتھارٹی کے سابق چیف انجینئر یادو سنگھ کے خلاف آج دو معاملے درج کئے اور ریاست کے 14 مختلف ٹھکانوں پر چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

    مرکزی جانچ بیورو (سی بی آئی) نے الہ آباد ہائی کورٹ کے حکم پر نوئیڈاڈیولپمنٹ اتھارٹی کے سابق چیف انجینئر یادو سنگھ کے خلاف آج دو معاملے درج کئے اور ریاست کے 14 مختلف ٹھکانوں پر چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی۔ مرکزی جانچ بیورو ، سی بی آئی نے الہ آباد ہائی کورٹ کے حکم پر نوئیڈاڈیولپمنٹ اتھارٹی کے سابق چیف انجینئر یادو سنگھ کے خلاف آج دو معاملے درج کئے اور ریاست کے 14 مختلف ٹھکانوں پر چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

      سی بی آئی کے ترجمان نے بتایا کہ مسٹر سنگھ کے خلاف تعزیرات ہند اور انسداد بدعنوانی قانون کی مختلف دفعات کے تحت کیس درج کئے گئے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ اس معاملے میں جانچ ایجنسی نوئیڈا / گریٹر نوئیڈا کے 12 ٹھکانوں اور آگرہ اور فیروز آباد میں ایک ایک ٹھکانے پر چھاپے مار رہی ہے۔ ایک سماجی کارکن نوتن ٹھاکر نے دسمبر 2014 میں الہ آباد ہائی کورٹ کی لکھنؤ بنچ کے سامنے مسٹر سنگھ کے خلاف عرضی دائر کی تھی۔ اسی درخواست کے تناظر میں عدالت نے آمدنی سے زائد اثاثہ کے معاملے میں مسٹر سنگھ کے خلاف سی بی آئی جانچ کا حکم دیا تھا۔ تفصیلی رپورٹ کا انتظار ہے۔
      First published: