உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    چنڈی گڑھ MMS کیس: ملزم لڑکی کو چیٹنگ پر دھمکانے والا آرمی جوان نکلا

    ذرائع کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ پولیس موہت کمار کی بھی تلاش کر رہی تھی۔ پولیس اس کے گھر پہنچی تو معلوم ہوا کہ وہ فوج میں تعینات ہے۔ جب وارڈن ملزم لڑکی سے ویڈیو کے بارے میں پوچھ گچھ کر رہا تھا تو لڑکی کو موبائل نمبر 6269275576 ​​سے بار بار کالز آ رہی تھیں۔

    ذرائع کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ پولیس موہت کمار کی بھی تلاش کر رہی تھی۔ پولیس اس کے گھر پہنچی تو معلوم ہوا کہ وہ فوج میں تعینات ہے۔ جب وارڈن ملزم لڑکی سے ویڈیو کے بارے میں پوچھ گچھ کر رہا تھا تو لڑکی کو موبائل نمبر 6269275576 ​​سے بار بار کالز آ رہی تھیں۔

    ذرائع کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ پولیس موہت کمار کی بھی تلاش کر رہی تھی۔ پولیس اس کے گھر پہنچی تو معلوم ہوا کہ وہ فوج میں تعینات ہے۔ جب وارڈن ملزم لڑکی سے ویڈیو کے بارے میں پوچھ گچھ کر رہا تھا تو لڑکی کو موبائل نمبر 6269275576 ​​سے بار بار کالز آ رہی تھیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Chandigarh, India
    • Share this:
      چندی گڑھ۔ چندی گڑھ یونیورسٹی کے وائرل ویڈیو کے معاملے میں پولیس کو جس چوتھے مشتبہ پر شبہ ہے وہ جموں میں آرمی یونٹ کا سپاہی نکلا۔ جوان کا نام موہت کمار ہے اور وہ پنجاب کے ہوشیار پور مکیران کا رہنے والا ہے۔ ذرائع کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ پولیس موہت کمار کی بھی تلاش کر رہی تھی۔ پولیس اس کے گھر پہنچی تو معلوم ہوا کہ وہ فوج میں تعینات ہے۔ جب وارڈن ملزم لڑکی سے ویڈیو کے بارے میں پوچھ گچھ کر رہا تھا تو لڑکی کو موبائل نمبر 6269275576 ​​سے بار بار کالز آ رہی تھیں جس میں مبینہ طور پر شملہ سے گرفتار ملزم رنکج ورما کی ڈی پی لگی تھی۔ اس نمبر پر ملزم سے مسلسل چیٹنگ کر رہی تھی اور وہ لڑکی کو ویڈیو ڈیلیٹ کرنے کی دھمکی دے رہا تھا۔ یہ نمبر موہت کی آئی ڈی پر چل رہا تھا۔

      آرمی انٹیلی جنس پوچھ گچھ کر رہی ہے۔
      موہت کی شناخت کے بعد اب آرمی انٹیلی جنس اس سے پوچھ گچھ کر رہی ہے۔ آرمی انٹیلی جنس جانچ کر رہی ہے کہ اس معاملے میں موہت کا کیا رول تھا۔ یہاں پنجاب پولیس اب یہ جاننے کی کوشش کر رہی ہے کہ ملزم لڑکی کا آرمی جوان سے رشتہ کیسے قائم ہوا۔ وہ بار بار لڑکی سے ویڈیو ڈیلیٹ کرنے کو کیوں کہہ رہا تھا۔ جموں پولیس ملزم موہت سے بھی پوچھ گچھ کر رہی ہے۔

      لیک ہو گئے ہوں پرائیویٹ فوٹوز۔ویڈیوز، تو اس طرح کر سکتے ہیں ڈلیٹ: طریقہ یہاں جانیں


      ہیکرس نے اسکول میسیجنگ ایپ کو کیا ہیک، ٹیچرس اور والدین کو بھیجی برہنہ فوٹوز

      موبائل نمبر 6269275576 ​​پر بات چیت کے اقتباسات
      لڑکا: گیلری کھولیں اور تمام اسکرین شاٹ ویڈیو کو ڈلیٹ کریں۔ ٹھیک ہے
      لڑکی: تصویر بھی
      لڑکا: جو کہا پہلے کرو
      لڑکا: کیا آپ نے ویڈیو ڈیلیٹ کر دی؟ اس کی تصویر بھیجیں
      لڑکا: وہ جو نہانے گئی تھی، اب کیا کر رہی ہے؟
      لڑکی: وہ آ گئی ہے۔
      لڑکا: تم نے تصویر کیوں نہیں لی؟
      لڑکی: تم نے مجھے مروا دیا تھا۔
      لڑکا: اس کی تصویر بھیج رہی ہوں۔
      لڑکا: میں نے کیا کہا
      لڑکی: جب میں اس لڑکی کی تصویر کھینچ رہی تھی تو ایک لڑکی نے مجھے ایسا کرتے دیکھا اور وہ کسی سے کہہ رہی تھی کہ میں نہاتے ہوئے اس کی تصویر کھینچ رہی تھی۔
      لڑکا: میں نے کیا بولا

      ویڈیو سکینڈل میں رنکج کی ڈی پی کا ہوا استعمال
      ویڈیو لیک معاملے میں، مشتبہ رنکج ورما کے بھائی نے دعویٰ کیا تھا کہ رنکاج مشتبہ سنی مہتا کو نہیں جانتا اور رنکج کی ڈسپلے تصویر کو ایک نامعلوم نمبر نے ویڈیو شیئر کرنے کے لیے غلط استعمال کیا تھا۔ بھائی نے میڈیا کو ایک بیان میں کہا کہ اس نے 18 ستمبر کو اپنی ڈسپلے پکچر کے ذریعے فون نمبر ٹریس کرنے کے لیے پولیس سے رابطہ کیا تھا۔ الزام لگایا جا رہا ہے کہ رنکج ورما سنی کی طرف سے موصول ہونے والی ویڈیو کو دوسروں کو فارورڈ کرتا تھا۔ پولیس کو تفتیش کرنی چاہیے کہ یہ ویڈیوز کس فون نمبر پر بھیجی گئیں۔ پولیس حکام کا کہنا ہے کہ تصدیق کے بعد فارنسک  ڈیٹا سے تفتیش کی جائے گی۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: