ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

فیس بک لائیو میں سی ایم بھوپیش بگھیل کودیں گالیاں، سونیاگاندھی پر بھی کیابھدا تبصرہ، ملزم گرفتار

پولیس نے سوشل میڈیا میں ریاست کے وزیر اعلی بھوپیش بگھیل (CM Bhupesh Baghel) کے خلاف قابل اعتراض تبصرہ کرنے کے الزام میں ایک شخص کو گرفتار کیا ہے۔

  • Share this:
فیس بک لائیو میں سی ایم بھوپیش بگھیل کودیں گالیاں، سونیاگاندھی پر بھی کیابھدا تبصرہ، ملزم گرفتار
پولیس نے سوشل میڈیا میں ریاست کے وزیر اعلی بھوپیش بگھیل (CM Bhupesh Baghel) کے خلاف قابل اعتراض تبصرہ کرنے کے الزام میں ایک شخص کو گرفتار کیا ہے۔

چھتیس گڑھ (chhattisgarh)کی راجدھانی راۓ پور کی پولیس نے سوشل میڈیا میں ریاست کے وزیر اعلی بھوپیش بگھیل  (CM Bhupesh Baghel) کے خلاف  قابل اعتراض تبصرہ کرنے کے الزام میں ایک شخص کو گرفتار کیا ہے۔ ملزم کو فون لوکیشن کی بنیاد پر گرفتار کیا گیا ہے۔‌ پولیس نے ایف آئی آر درج کرنے کے 24 گھنٹے کے اندر ہی ہیں ملزم کو پکڑنے کا دعویٰ کیا ہے۔ رائے پور کی سول لائن پولیس نے ملزم کو کھمترائی علاقے کے شیوانند نگر سے گرفتار کیا ہے۔


ملزم ایس چندرشیکھرراؤ شیوانند نگر میں ہی رہتا ہے اور کوئی کام نہیں کرتا۔ ابھی وہ بے روزگار ہے۔ کپڑے دراصل سول لائنز تھانے میں کانگریس لیڈر ونود تیواری نے ایک شکایت درج کرائی تھی۔ اس میں بتایا تھا کہ ایس چندرشیکھرراؤ نے وزیراعلی بھوپیش بگھیل کے کسان نیائے یوجنا کے افتتاح کے موقع  پر فیس بک لائیو (Facebook Live) کے دوران بھدی گالیاں لکھتے ہوئے نہ صرف بھوپیش بگھیل بلکہ  کانگریس (Congress) کی عبوری صدر سونیا گاندھی (Sonia Gandhi)   اور سابق وزیراعظم راجیوگاندھی کے خلاف بھدے تبصرے کئے تھے۔


اس تبصرہ کے خلاف اعتراض ظاہر کرتے ہوئے ونود تیواری نے سول لائنز تھانے میں ایف آئی آر درج کرائی تھی۔ سول لائن پولیس نے معاملے میں دفعہ 504 اور 505 کے تحت کیس درج کیا تھا۔


اس لیے کی شکایت
شکایت درج کرانے والے کانگریس لیڈر ونو تیواری کا کہنا تھا کہ سوشل میڈیا میں غیر مریادہ تبصرہ کرنا چاہیے۔ بہتر لفظوں میں مخالفت ظاہر کرنا چاہیے۔ لیکن کچھ لوگ مسلسل فحش زبان کا استعمال سوشل میڈیا پر کرنے لگے ہیں۔ ایسے لوگوں کے خلاف کارروائی ہونی چاہیے۔ سنگل لائن کے تھانہ انچارج سشانتو بنرجی کا کہنا ہے کہ ملزم کو شیوانند نگر سے گرفتار کر لیا گیا ہے۔ ملزم ایس چندر شیکھر راؤ کو کو پیش کیا گیا تھا جہاں سے جیل بھیج دیا گیا ہے۔
First published: May 24, 2020 12:42 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading