ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

چیف سکریٹری مار پیٹ کیس : عام آدمی پارٹی لیڈر امانت اللہ خان کی عدالتی تحویل میں 14 دنوں کی توسیع

تیس ہزاری کورٹ نے دہلی کے چیف سکریٹری انشو پرکاش کے ساتھ مبینہ بدسلوکی کے معاملے میں زیر حراست عام آدمی پارٹی ( عاپ ) کے دو ممبران اسمبلی کی عدالتی تحویل کی مدت 14 دن بڑھا دی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 08, 2018 05:59 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
چیف سکریٹری مار پیٹ کیس : عام آدمی پارٹی لیڈر امانت اللہ خان کی عدالتی تحویل میں 14 دنوں کی توسیع
امانت اللہ خان: فائل فوٹو۔

نئی دہلی : تیس ہزاری کورٹ نے دہلی کے چیف سکریٹری انشو پرکاش کے ساتھ مبینہ بدسلوکی کے معاملے میں زیر حراست عام آدمی پارٹی ( عاپ ) کے دو ممبران اسمبلی کی عدالتی تحویل کی مدت 14 دن بڑھا دی ہے۔ پہلے دونوں کو 14 دن کی عدالتی حراست میں بھیجا گیا تھا۔ عدالتی تحویل کی مدت مکمل ہونے پر اوکھلا سے رکن اسمبلی امانت اللہ خاں اور دیولی سے رکن اسمبلی پرکاش جروال کو میٹروپولیٹن مجسٹریٹ شیپھالي برنالا ٹنڈن کے سامنے پیش کیا گیا۔ مجسٹریٹ شیپھالي نے دونوں کی عدالتی تحویل کی مدت مزید 14 دن بڑھاكر 22 مارچ تک کر دی۔

انشو پرکاش کے ساتھ 19 فروری کی رات کو وزیر اعلی کی سرکاری رہائش گاہ پر مبینہ بدسلوکی کا معاملہ پیش آیا تھا۔ چیف سکریٹری کی شکایت پر دہلی پولس نے مختلف دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا تھا۔ دونوں ممبران اسمبلی کو گرفتار کئے جانے کے بعد انہیں پہلے تو ایک دن کی حراست میں اور پھر معاملے کو "حساس 'بتاتے ہوئے 22 فروری کو 14 دن کی عدالتی تحویل میں بھیجا گیا تھا۔

پرکاش جروال نے مجسٹریٹ عدالت میں درخواست ضمانت نامنظور کئے جانے کے بعد سیشن کورٹ میں اپیل کی تھی۔ سیشن کورٹ نے بھی جروال کی ضمانت کی درخواست نامنظور کر دی تھی۔ اس کے بعد دونوں ممبران اسمبلی نے ضمانت کے لئے دہلی ہائی کورٹ میں اپیل کی تھی اور ابھی ان کی ضمانت پر فیصلہ نہیں ہوا ہے۔ جروال کو واقعہ کے ایک دن بعد 20 فروری کو گرفتار کیا گیا تھا اور امانت اللہ خاں کو 21 فروری کو گرفتار کیا گیا۔

First published: Mar 08, 2018 05:59 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading