ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

پیلیٹ گن کی جگہ اب کشمیر میں چلایا جائے گا مرچ کا گولہ

مرکزی وزارت داخلہ کی جانب سے کشمیر میں پیلیٹ گن کا متبادل تلاش کرلیا گیا ہے۔ ماہرہن کی کمیٹی نے پیلیٹ گن کی بجائے مرچ سے بھرے ہوئے 'پاوا گولوں کے استعمال کو متبادل قرار دیا ہے۔

  • Agencies
  • Last Updated: Aug 26, 2016 10:34 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
پیلیٹ گن کی جگہ اب کشمیر میں چلایا جائے گا مرچ کا گولہ
مرکزی وزارت داخلہ کی جانب سے کشمیر میں پیلیٹ گن کا متبادل تلاش کرلیا گیا ہے۔ ماہرہن کی کمیٹی نے پیلیٹ گن کی بجائے مرچ سے بھرے ہوئے 'پاوا گولوں کے استعمال کو متبادل قرار دیا ہے۔

نئی دہلی : مرکزی وزارت داخلہ کی جانب سے کشمیر میں پیلیٹ گن کا متبادل تلاش کرلیا گیا ہے۔ ماہرہن کی کمیٹی نے پیلیٹ گن کی بجائے مرچ سے بھرے ہوئے پاوا گولوں کے استعمال کو متبادل قرار دیا ہے۔مرچ پاؤڈر والا یہ کم مہلک ہتھیار نشانے کو عارضی طور پر غیر فعال بنا دیتا ہے۔ یہ ایک آرگینک کمپاؤنڈ ہے ، جو قدرتی طور پر مرچ میں پایا جاتا ہے۔

کمیٹی نے اس ہفتے کے آغاز میں قومی دارالحکومت میں ان گولوں کا تجربہ کیا اور پھر کشمیر وادی میں مظاہرہ جیسی صورتحال اور ہجوم پر قابو پانے کے لئے سیکورٹی فورسز کو پیلٹ گن کی جگہ پر اس کے استعمال کیلئے ہاں کہہ دی ۔ پیلٹگن کے استعمال کی وجہ سے وادی میں بہت سے لوگ زخمی ہو گئے ہیں اور اندھےپن کے شکار ہو گئے ہیں، جس کی وجہ سے حکومت کی کافی تنقید کی جارہی ہے۔

اس سلسلے میں تیار بلیو پرنٹ اور دستاویزات کے مطابق لکھنؤ میں واقع 'سائنس اور صنعتی ریسرچ کونسل کی لیبارٹری میں پاوا گولوں کا ٹیسٹ ایک سال سے زیادہ عرصے سے چل رہا تھا۔''کمیٹی کے کام کاج سے وابستہ ذرائع کا کہنا ہے کہ پینل نے گنزگولا والی بندوقیں کے متبادل کے طور پر 'پاوا گولوں کا آپشن دیا ہے اور سفارش کی جاتی ہے کہ گوالیار میں واقع بی ایس ایف کی یونٹ کو فوری طور پر ایسے گولوں کے بنانے کا کام سپرد کر دیا جائے۔ پہلی کھیپ میں کم از کم 50000 گولے بنائے جائیں۔

بلیو پرنٹس کے مطابق کمیٹی نے پایا کہ 'پاوا کو کم مہلک ہتھیار کے زمرے میں رکھا جا سکتا ہے۔ داغے جانے کے بعد گولہ پھٹتا ہے اور نشانے (مظاہرین) کو عارضی طور پر سن اور مفلوج کردیتا ہے۔ اچھی بات یہ ہے کہ آنسو گیس اور پیپر اسپرے کے مقابلہ میں اس کا اثر تیزی سے کم ہوتا ہے۔

First published: Aug 26, 2016 10:33 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading