உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    لداخ سرحد میں داخل ہوئی چینی فوج ، ہندوستانی فوج نے مار بھگایا

    نئی دہلی : لداخ سیکٹر میں دراندازی کرتے ہوئے چین کے فوجی اس ہفتے پانگونگ جھیل کے علاقے کے قریب ہندوستانی علاقے میں تقریبا چھ کلومیٹر اندر تک گھس آئے ، جس کے بعد دونوں ملکوں  کے سیکورٹی جوان آمنے سامنے آ گئے ۔  سیکورٹی اسٹیبلشمنٹ سے وابستہ ذرائع نے  بتایا کہ یہ واقعہ گزشتہ آٹھ مارچ ہے ۔  اس دن پی ایل اے کے قریب 11 فوجی پانگونگ کے قریب  فنگر - 8  اور  سرجاپ - 1  میں  حقیقی کنٹرول لائن  کو پار کر ہندوستانی علاقے میں داخل ہوگئے ۔ ان جوانوں کی قیادت کرنل سطح کا ایک افسر کر رہا تھا ۔

    نئی دہلی : لداخ سیکٹر میں دراندازی کرتے ہوئے چین کے فوجی اس ہفتے پانگونگ جھیل کے علاقے کے قریب ہندوستانی علاقے میں تقریبا چھ کلومیٹر اندر تک گھس آئے ، جس کے بعد دونوں ملکوں کے سیکورٹی جوان آمنے سامنے آ گئے ۔ سیکورٹی اسٹیبلشمنٹ سے وابستہ ذرائع نے بتایا کہ یہ واقعہ گزشتہ آٹھ مارچ ہے ۔ اس دن پی ایل اے کے قریب 11 فوجی پانگونگ کے قریب فنگر - 8 اور سرجاپ - 1 میں حقیقی کنٹرول لائن کو پار کر ہندوستانی علاقے میں داخل ہوگئے ۔ ان جوانوں کی قیادت کرنل سطح کا ایک افسر کر رہا تھا ۔

    نئی دہلی : لداخ سیکٹر میں دراندازی کرتے ہوئے چین کے فوجی اس ہفتے پانگونگ جھیل کے علاقے کے قریب ہندوستانی علاقے میں تقریبا چھ کلومیٹر اندر تک گھس آئے ، جس کے بعد دونوں ملکوں کے سیکورٹی جوان آمنے سامنے آ گئے ۔ سیکورٹی اسٹیبلشمنٹ سے وابستہ ذرائع نے بتایا کہ یہ واقعہ گزشتہ آٹھ مارچ ہے ۔ اس دن پی ایل اے کے قریب 11 فوجی پانگونگ کے قریب فنگر - 8 اور سرجاپ - 1 میں حقیقی کنٹرول لائن کو پار کر ہندوستانی علاقے میں داخل ہوگئے ۔ ان جوانوں کی قیادت کرنل سطح کا ایک افسر کر رہا تھا ۔

    • Agencies
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی : لداخ سیکٹر میں دراندازی کرتے ہوئے چین کے فوجی اس ہفتے پانگونگ جھیل کے علاقے کے قریب ہندوستانی علاقے میں تقریبا چھ کلومیٹر اندر تک گھس آئے ، جس کے بعد دونوں ملکوں  کے سیکورٹی جوان آمنے سامنے آ گئے ۔  سیکورٹی اسٹیبلشمنٹ سے وابستہ ذرائع نے  بتایا کہ یہ واقعہ گزشتہ آٹھ مارچ ہے ۔  اس دن پی ایل اے کے قریب 11 فوجی پانگونگ کے قریب  فنگر - 8  اور  سرجاپ - 1  میں  حقیقی کنٹرول لائن  کو پار کر ہندوستانی علاقے میں داخل ہوگئے ۔ ان جوانوں کی قیادت کرنل سطح کا ایک افسر کر رہا تھا ۔


      ذرائع نے کہا کہ چین کے فوجی چار گاڑیوں سے ہندوستان کی  سیکورٹی چوکی سے داخل ہوئے اور ہندوستانی علاقے کے 5.5 کلومیٹر اندر تک پہنچ گئے ۔ ان گاڑیوں میں دو ہلکی، ایک درمیانی اور ایک بھاری گاڑی تھی ۔ تاہم فی الحال  فوج کا ردعمل  سامنے نہیں آیا ہے ۔


      بہر حال  ذرائع نے کہا کہ چینی فوجیوں کی ٹیم کی قیادت کرنل سطح کا ایک افسر کر رہا تھا اور اس میں دو میجر بھی شامل تھے ۔ خبروں کے مطابق چین   کے جوان ہتھیاروں سے لیس تھے اور آئی ٹی بی پی جوانوں کے پاس بھی ہتھیار اور دوسرے رسد  تھے ۔


      دولت بیگ اولڈی میں مئی  2013 میں دونوں فریقوں کے درمیان تین ہفتوں تک تصادم کے بعد سے 90 کلومیٹر کے پانگونگ جھیل کے کنارے کے علاقے میں حالات کشیدہ رہے ہیں ۔ چین فنگر - 4 سیکٹر میں سڑک کی تعمیر کرانے میں کامیاب رہا ہے جو سرجاپ علاقے میں بھی پڑتی ہے اور ایل اے سی کے پانچ کلومیٹر اندر تک ہے ۔

      First published: