ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

لوٹ اور قتل کی وارداتوں سے دھل گیا شہر، بدمعاشوں نے پولیس کے دعووں کی کھول دی پول

اترپردیش میں مسلسل پولیس انکاؤنٹر کے باوجود جرم کا گراف گرنےکا نام نہیں لے رہا ہے۔ پولیس سے بے خوف جرائم پیشہ عناصر دن دہاڑے لوٹ اور قتل کی وارداتوں کو انجام دیکر فرار ہو رہے ہیں۔

  • Share this:
لوٹ اور قتل کی وارداتوں سے دھل گیا شہر، بدمعاشوں نے پولیس کے دعووں کی کھول دی پول
لوٹ اور قتل کی وارداتوں سے دھل گیا شہر ، بدمعاشوں نے پولیس کے دعووں کی کھول دی پول

میرٹھ: اترپردیش میں مسلسل پولیس انکاؤنٹر کے باوجود جرم کا گراف گرنےکا نام نہیں لے رہا ہے۔ پولیس سے بے خوف جرائم پیشہ عناصر دن دہاڑے لوٹ اور قتل کی وارداتوں کو انجام دیکر فرار ہو رہے ہیں۔ تازہ معاملہ میرٹھ کا ہے، جہاں 24 گھنٹے کے اندر بدمعاشوں نے لوٹ اور قتل کی دو الگ الگ وارداتوں کو انجام دے کر پولیس انتظامیہ کے دعووں کی پول کھول دی ہے۔ کل دن میں جگریتی وہار علاقے میں صرافہ کاروباری کی دکان میں لوٹ کرنے کے بعد بدمعاشوں نے کاروباری کے بیٹے کو گولی مارکر قتل کر دیا تھا۔


اس معاملے میں میرٹھ پولیس ابھی کچھ کارروائی کر پاتی کہ آج دن نکلتے ہی بدمعاشوں نے دورالا تھانہ علاقے میں ایک جم ٹرینر اور ٹھیکے دارکا گولی مارکر قتل کر دیا۔ لوٹ اور قتل کی ان وارداتوں سے شہر کے لوگ اور بالخصوص کاروباری طبقہ دہشت میں ہے اور پولیس انتظامیہ کی کارکردگی پر سوال کھڑے کر رہا ہے۔ وہیں پولیس کے اعلیٰ افسران کے پاس رٹے رٹائے جواب کے علاوہ اورکہنےکو اور کچھ نہیں ہے۔ پہلا معاملہ شہر کے جاگریتی وہار علاقے کا ہے، جہاں ایک صرافہ کاروباری کی دوکان پر دن کے 12 بجے کے قریب موٹر سائیکلوں پر آئے چار بدمعاشوں نے دھاوا بولا اور 10 لاکھ نقد اور پانچ کلو چاندی لوٹنے کے بعد دکان مالک کے بیٹے امن جین کی گولی مار دی، جس کی موقع پر ہی موت ہو گئی۔ بدمعاش اس واردات کو انجام دینے کے بعد آرام سے فرار ہوگئے اور پولیس لکیر پیٹتی رہ گئی۔


پولیس کا کہنا ہے کہ بدمعاشوں کو پکڑنے کے لئے پانچ ٹیمیں لگائی گئی ہیں۔ پولیس پر کاروباریوں کے بڑھتے دباؤ کے بعد اب پولیس نے جلد ہی بدمعاشوں کو گرفتار کرلینے کی یقین دہانی کرائی ہے۔ دوسرا معاملہ داورالا تھانہ علاقے کا ہے جہاں پرویندر نام کے ایک شخص کا آج صبح بدمعاشوں نے گولی مارکر قتل کر دیا۔ پرویندر ایک ٹھیکیدار کے علاوہ جم ٹرینر بھی تھا۔ پولیس اس معاملے کو پیسوں کے لین دین کا معاملے بتاکر معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے۔

Published by: Nisar Ahmad
First published: Sep 09, 2020 10:58 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading