ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دادری سانحہ : اکھلیش نے کہا : کورٹ کے فیصلے کا کرتے ہیں احترام ، اخلاق کا کنبہ پیر کو جائے گا ہائی کورٹ

اخلاق کے اہل خانہ کے وکیل نے کہا ہے کہ وہ جوڈیشیل مجسٹریٹ کے اس فیصلے کو الہ آباد ہائی کورٹ میں چیلنج کریں گے۔ وکیل نے کہا کہ پیر کو اس معاملے میں ایک عرضی ہائی کورٹ میں داخل کی جائے گی

  • Pradesh18
  • Last Updated: Jul 15, 2016 07:08 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
دادری سانحہ : اکھلیش نے کہا : کورٹ کے فیصلے کا کرتے ہیں احترام ، اخلاق کا کنبہ پیر کو جائے گا ہائی کورٹ
اخلاق کے اہل خانہ کے وکیل نے کہا ہے کہ وہ جوڈیشیل مجسٹریٹ کے اس فیصلے کو الہ آباد ہائی کورٹ میں چیلنج کریں گے۔ وکیل نے کہا کہ پیر کو اس معاملے میں ایک عرضی ہائی کورٹ میں داخل کی جائے گی

لکھنو : دادری کے بساہڑہ گاوں میں  مشتعل بھیڑ کے ذریعہ پیٹ پیٹ کر قتل کردئے گئے محمد اخلاق کے کنہ کے خلاف کیس درج کرنے کے عدالت کے حکم پر وزیر اعلی اکھلیش یادو نے کہا ہے کہ وہ عدالت کے فیصلے کا احترام کرتے ہیں۔ میڈیا سے بات چیت میں انہوں نے کہا کہ وہ عدالت کے فیصلے کا احترام کرتے ہیں اور ان کی حکومت اس بات کا خیال رکھے گی کی کسی بے گناہ کو سزا نہ ملے۔

ادھر اخلاق کے اہل خانہ کے وکیل نے کہا ہے کہ وہ جوڈیشیل مجسٹریٹ کے اس فیصلے کو الہ آباد ہائی کورٹ میں چیلنج کریں گے۔ وکیل نے کہا کہ پیر کو اس معاملے میں ایک عرضی ہائی کورٹ میں داخل کی جائے گی۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز دادری سانحہ میں گریٹر نوئیڈا کورٹ نے اخلاق کے کنبہ کے خلاف گئو کشی کا کیس درج کرنے کا حکم دیا تھا ۔ کورٹ نے اخلاق کے بھائی جان محمد، ماں اصغري، اہلیہ اكرام النسا، بیٹا دانش ، بیٹی شائستہ اور ایک رشتہ دار سونی کے خلاف کیس درج کرنے کا حکم دیا تھا ۔

دوسری طرف عدالت کے حکم کا وی ایچ پی نے خیر مقدم کیا ہے ۔ وی ایچ پی کے مطابق اس فیصلہ سے اترپردیش حکومت اور '' سیکولر مافیا کی سازش '' بے نقاب ہو گئی ہے۔ وی ایچ پی کے جوائنٹ سکریٹری جنرل سریندر جین کے مطابق کہ اخلاق کے کنبہ کو جلد جیل بھیجا جانا چاہئے اور ریاستی حکومت نے ان کو جو معاوضہ اور سہولیات دی تھیں، انہیں واپس بھی لیا جانا چاہئے۔

First published: Jul 15, 2016 06:47 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading