ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

فرضی بل بنا کر ٹیکس بچانے والوں کی اب خیر نہیں، حکومت نے شروع کی جانچ

جی ایس ٹی وصولی میں آ رہی تیزی سے گراوٹ سے نجات حاصل کرنے کے لئے حکومت اب ان لوگوں پر شکنجہ کسنے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے جو فرضی بل بنا کر حکومت کے پاس ان پٹ کریڈٹ ٹیکس کا دعویٰ ٹھونک رہے ہیں

  • Share this:
فرضی بل بنا کر ٹیکس بچانے والوں کی اب خیر نہیں، حکومت نے شروع کی جانچ
جی ایس ٹی وصولی میں آ رہی تیزی سے گراوٹ سے نجات حاصل کرنے کے لئے حکومت اب ان لوگوں پر شکنجہ کسنے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے جو فرضی بل بنا کر حکومت کے پاس ان پٹ کریڈٹ ٹیکس کا دعویٰ ٹھونک رہے ہیں

جی ایس ٹی وصولی میں تیزی سے گراوٹ آ رہی ہے اور حکام اس سے پریشان ہیں۔ اس سے نجات حاصل کرنے کے لئے حکومت اب ان لوگوں پر شکنجہ کسنے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے جو فرضی بل بنا کر حکومت کے پاس ان پٹ کریڈٹ ٹیکس کا دعویٰ ٹھونک رہے ہیں۔ ٹیکس حکام جلد ہی ان معاملوں کی جانچ شروع کر سکتے ہیں جن میں ان پٹ ٹیکس کریڈٹ کے لئے دعوے ٹھونکے جا رہے ہیں۔


یہ معاملہ براہ راست طور پر سرکاری خزانہ سے جڑا ہوا ہے۔ ٹیکس کی وصولی میں کیوں گراوٹ آ رہی ہے اس کے اسباب کی جانچ کے لئے وزرا کا ایک گروپ تشکیل دیا گیا ہے۔


جب اس وزرا گروپ کی میٹنگ ہوئی تب اس بات کا امکان پایا گیا کہ کچھ کاروباری فرضی بل کے ذریعہ ان پٹ ٹیکس کریڈٹ کا دعویٰ ٹھونک رہے ہیں۔ اسی وجہ سے جو ٹیکس کلیکشن ہے اس میں سے بڑی رقم ان پٹ کریڈٹ کے طور پر واپس جا رہی ہے۔ واضح رہے کہ مالی سال 2018-19 میں جی ایس ٹی کی اوسط ماہانہ وصولی 96،000 کروڑ روپئے رہی ہے۔

First published: Jan 28, 2019 02:42 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading