உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    تری پورہ میں مسلم مخالف فسادات پر مسلم جماعتوں میں تشویش

    تریپورہ کا فساد دراصل بنگلہ دیش کا ہی ردعمل ہے جو انتہائی افسوسناک ہے۔

    تریپورہ کا فساد دراصل بنگلہ دیش کا ہی ردعمل ہے جو انتہائی افسوسناک ہے۔

    ڈاکٹر سید قاسم رسول الیاس نے ریاست تریپورہ میں 20 اکتوبر سے شروع ہونے والے فرقہ وارانہ فساد کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ دراصل یہ  ملک کی سیکولر شناخت و تکثیری حیثیت پر حملہ ہے۔شمال مشرقی ریاستوں کے دائیں بازو کے عناصر نے 6 مساجد، مسلم اقلیتی طبقہ کے  تقریباً ایک درجن سے زائد مکانات اور دکانوں کو تباہ کردیا۔

    • Share this:
    ویلفیئر پارٹی آف انڈیا تریپورہ کے فرقہ وارانہ تشدد کی پرزور مذمت کرتی ہے اور ریاستی حکومت سے مطالبہ کرتی ہے کہ وہ شر پسند عناصر کے خلاف سخت کاروائی کرے۔ ویلفیئر پارٹی آف انڈیا کے قومی صدر ڈاکٹر سید قاسم رسول الیاس نے ریاست تریپورہ میں 20 اکتوبر سے شروع ہونے والے فرقہ وارانہ فساد کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ دراصل یہ ملک کی سیکولر شناخت و تکثیری حیثیت پر حملہ ہے۔ شمال مشرقی ریاستوں کے دائیں بازو کے عناصر نے 6 مساجد،مسلم اقلیتی طبقہ کے تقریباً ایک درجن سے زائد مکانات اور دوکانوں کو تباہ کردیا۔ انہوں نے کہا کہ ویلفیئر پارٹی نے 18 اکتوبر 2021 کے اپنے پریس بیان میں بنگلہ دیش کے فرقہ وارانہ تشدد کی نہ صرف پرزور مذمت کی تھی بلکہ اپنے ملک کی حکومت اور عوام سے بھی پرزور اپیل کی تھی کہ ہمیں ہر حال میں اپنے ملک امن و سلامتی قائم رکھنی چاہئے۔ تریپورہ کا فساد دراصل بنگلہ دیش کا ہی ردعمل ہے جو انتہائی افسوسناک ہے۔
    انہوں نے کہا کثرت میں وحدت ہمارے ملک کی شناخت ہی نہیں بلکہ طرہ امتیاز ہے، کسی فرد یا طبقہ کے ذریعہ اس کو نقصان پہنچانا دراصل ملک کے وفاقی ڈھانچہ کو نقصان پہنچانے کے مترادف ہے جد کی پرزور مذمت کی جانی چاہئے۔
    ڈاکٹر الیاس نے کہا کہ ملک کے تمام مذہبی، ثقافتی اور نسلی گروہوں کو ملک کے قانوں نے برابر کا تحفظ فراہم کیا ہے اور یہ ان کا دستوری و بنیادی حق ہے ۔ فرقہ وارانہ تشدد دراصل وہ دیمک ہے جو ملک کے اتحاد و سالمیت اور ہماری مشترکہ اقدار کو چاٹ جائے گی۔انہوں نے کہا یہ افسوسناک واقعات ہماری سیاست اور شہریت پر ایک بھاری وجہ ہیں۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ جلدازجلد احتیاطی تدابیر اور قانونی چارہ جوئی کے ذریعہ اس کا تدارک کیا جائے۔

    انہوں نے تریپورہ حکومت سے اپیل کی کہ وہ بعجلت ممکنہ اس فساد کو روکے، جو لوگ اجڑ گئے ان کی بازآبادکاری کے پختہ انتظامات کرے، نقصانات کی بھر پائی کے لئے متاثرین کو بھرپور معاوضہ دے، خطا کاروں کو سخت سزا دے اور ریاست میں امن و سلامتی کو جلد از جلد بحال کرے۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: