ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

لوک سبھا انتخابات 2019: نیشنل کانفرنس کے ساتھ ہاتھ ملائے گی کانگریس، جلد ہو گا سمجھوتہ

ممکنہ اتحاد میں نیشنل کانفرنس جموں علاقہ میں کانگریس کی حمایت کرے گی۔ پچھلے سال یہاں سے بی جے پی نے جیت درج کی تھی۔

  • Share this:
لوک سبھا انتخابات 2019: نیشنل کانفرنس کے ساتھ ہاتھ ملائے گی کانگریس، جلد ہو گا سمجھوتہ
کشمیر میں ایک ریلی کے دوران راہل گاندھی اور عمر عبداللہ: فائل فوٹو

کانگریس اور فاروق عبداللہ کی زیر قیادت نیشنل کانفرنس 11 اپریل سے شروع ہونے والے لوک سبھا انتخابات میں جموں وکشمیر میں گٹھ بندھن کرنے کے لئے تیار ہیں۔ دونوں پارٹیوں کے ذرائع نے نیوز 18 کو بتایا کہ کانگریس صدر راہل گاندھی اور نیشنل کانفرنس کے نائب صدر عمر عبداللہ جلد ہی نئی دلی میں میٹنگ کریں گے اور گٹھ بندھن کیسے کام کرے گا اس پر بات چیت کریں گے۔


ممکنہ اتحاد میں نیشنل کانفرنس جموں علاقہ میں کانگریس کی حمایت کرے گی۔ پچھلے سال یہاں سے بی جے پی نے جیت درج کی تھی۔ جموں میں دو سیٹیں ہیں۔ 2014 کے انتخابات میں بی جے پی نے ان دونوں سیٹوں پر جیت درج کی تھی۔


وہیں، کشمیر میں کانگریس نیشنل کانفرنس کے امیدواروں کی حمایت کرے گی۔ کشمیر میں لوک سبھا کی تین سیٹیں ہیں۔ 2014 کے الیکشن میں ان تینوں ہی سیٹوں پر پی ڈی پی کے امیدواروں نے جیت درج کی تھی۔ حالانکہ، 2016 میں سری نگر سے پی ڈی پی امیدوار طارق احمد استعفیٰ دے کر پھر سے کانگریس میں شامل ہو گئے تھے۔ اس کے اگلے سال کشمیر میں ضمنی الیکشن ہوا۔ تشدد اور کم ووٹنگ کے درمیان نیشنل کانفرنس کے فاروق عبداللہ یہاں سے جیتنے میں کامیاب رہے۔


کشمیر میں تیسری سیٹ سے محبوبہ مفتی رکن پارلیمنٹ تھیں۔ اپنے والد کے انتقال کے بعد انہوں نے پارلیمانی سیٹ سے استعفیٰ دے کر اسمبلی الیکشن لڑا۔ جموں وکشمیر کی ایک اور لوک سبھا سیٹ لداخ خطہ میں ہے۔ پچھلے الیکشن میں یہاں سے بی جے پی جیتی تھی۔ اگر کانگریس اور نیشنل کانفرنس کے درمیان اتحاد ہوتا ہے تو اس سیٹ پر دلچسپ مقابلہ دیکھنے کو مل سکتا ہے۔

آکاش حسن کی رپورٹ 
First published: Mar 14, 2019 12:40 PM IST