ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کرناٹک الیکشن کی تاریخ پہلے ہی ہو گئی لیک، کانگریس نے بی جے پی پر سادھا نشانہ

نئی دہلی۔ الیکشن کمیشن کرناٹک اسمبلی انتخابات کی تاریخوں کی خبر لیک ہونے کی تحقیقات کرائے گا اور اس سلسلہ میں قصوروار افراد کے خلاف سخت سے سخت کارروائی کی جائے گی۔

  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کرناٹک الیکشن کی تاریخ پہلے ہی ہو گئی لیک، کانگریس نے بی جے پی پر سادھا نشانہ
امت مالویہ نے تنازع کو بڑھتا دیکھ کر اپنا یہ ٹویٹ ڈیلیٹ کر دیا۔

نئی دہلی۔ الیکشن کمیشن کرناٹک اسمبلی انتخابات کی تاریخوں کی خبر لیک ہونے کی تحقیقات کرائے گا اور اس سلسلہ میں قصوروار افراد کے خلاف سخت سے سخت کارروائی کی جائے گی۔ چیف الیکشن کمشنراوپی راوت نے آج یہاں صحافیوں کے سوال کے جواب میں یہ اعلان کیا۔  راوت جب 11 بجے کرناٹک اسمبلی انتخابات کا اعلان کرنے کے لئے صحافیوں کے سامنے آئے تو انہوں نے سب سے پہلے اس الیکشن کے بارے میں ابتدائی تفصیلات بتائیں۔ پریس کے نمائندے کانفرنس ہال میں انتخابات کی تاریخوں کے اعلان کا ابھی انتظار ہی کر ہی رہے تھے کہ ان کے موبائلوں پر سوشل میڈیا میں انتخابات کی تاریخیں آنے لگیں۔ تب کچھ صحافیوں نے پریس کانفرنس کے درمیان ہی راوت سے یہ سوال کیا کہ ابھی آپ نے انتخابات کی تاریخ کا اعلان بھی نہیں کیا تو یہ خبر کیسے لیک ہو گئی۔ بھارتیہ جنتا پارٹی کا آئی ٹی سیل کس طرح ان تاریخوں کی معلومات سوشل میڈیا پر دے رہا ہے۔


تب راوت نے کہا کہ وہ بھی اس بات کا پتہ لگائیں گے کہ سوشل میڈیا پر الیکشن کی جو تاریخیں بتائی جا رہی ہیں کیا وہ وہی تاریخ ہے جس کا وہ اب اعلان کرنے والے ہیں۔ اس کے بعد ہی اس معاملہ میں کوئی کارروائی کی جائے گی۔ تھوڑی دیر بعد  راوت نے کرناٹک اسمبلی انتخابات کے نوٹیفکیشن کی تاریخ 17 اپریل بتائی اور ووٹنگ کی تاریخ  12 مئی بتائی تب سارے صحافیوں نے ایک لہجے میں کہا کہ الیکشن کمیشن کی تاریخ میں پہلی بار ہوا ہے کہ کمیشن کے اعلان سے پہلے ہی انتخابات کی تاریخیں لیک ہو گئیں۔ یہ ایک سنگین معاملہ ہے۔ کیا کمیشن اس معاملہ میں کوئی کارروائی کرے گا۔


راوت نے پھر کہا کہ وہ اس معاملہ کی جانچ كرائیں گے اور جو بھی قانونی اور انتظامی کارروائی ممکن ہوگی وہ سخت سے سخت طریقے سے کی جائے گی۔ انتخابات کی خبریں لیک ہونے سے پریس کانفرنس میں سنسنی سی پھیل گئی اور سارے صحافی اس بات پر حیرت کرنے لگے کہ آخر الیکشن کمیشن کے اعلان سے پہلے یہ خبر کس طرح لیک ہو گئی۔ اس کے بعد الیکشن کمیشن کے افسر اس سلسلے میں کچھ خاص بتانے سے گریز کرنے لگے۔


دراصل، بی جے پی کے آئی ٹی سیل کے سربراہ امت مالویہ نے پیرکی رات کو ٹویٹ کیا کہ کرناٹک میں ووٹنگ 12 مئی کو ہوگی اور 18 مئی کو ووٹوں کی گنتی ہوگی۔ حالانکہ، ان کی یہ بات پوری طرح سے صحیح ثابت نہیں ہوئی، لیکن اس معاملہ میں بڑھتے تنازعہ کو دیکھ کر انہوں نے اپنا ٹویٹ ڈیلیٹ کر دیا۔


Amit-Malviya_875


کانگریس کے ترجمان رندیپ سرجیوالا نے اس معاملے میں بی جے پی کوآڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ اس نے انتخابی کمیشن کی ساکھ پر سوال اٹھایا ہے۔ سرجے والا نے ٹویٹ کیا کہ بی جے پی ایک 'سپر الیکشن کمیشن' بن گئی ہے۔ انہوں نے امت مالویہ کے ٹویٹ کے اسکرین شاٹ کے ساتھ ٹویٹر پر سوال کیا کہ کیا الیکشن کمیشن خفیہ اطلاعات لیک کرنے کے معاملہ میں بی جے پی  کے صدر امت شاہ کو نوٹس جاری کرے گا اور بی جے پی آئی ٹی سیل کے سربراہ کے خلاف ایف آئی آر درج کروائے گا؟




First published: Mar 27, 2018 01:37 PM IST