ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

نریندرمودی اور آنندی بین اراضی گھپلے میں اپنی خاموشی توڑیں: کانگریس

نئی دہلی۔ کانگریس نے گجرات کی وزیر اعلی آنندی بین پٹیل کی بیٹی انار پٹیل کی حصہ داری والی کمپنی کو کوڑیوں کے دام سرکاری زمین دیے جانے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ گزشتہ دو تین دن میں اس معاملے میں جو نئے انکشافات ہوئے ہیں، ان کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی اور محترمہ پٹیل کو خاموشی توڑنی چاہئے۔

  • UNI
  • Last Updated: Feb 09, 2016 10:18 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
نریندرمودی اور آنندی بین اراضی گھپلے میں اپنی خاموشی توڑیں: کانگریس
نئی دہلی۔ کانگریس نے گجرات کی وزیر اعلی آنندی بین پٹیل کی بیٹی انار پٹیل کی حصہ داری والی کمپنی کو کوڑیوں کے دام سرکاری زمین دیے جانے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ گزشتہ دو تین دن میں اس معاملے میں جو نئے انکشافات ہوئے ہیں، ان کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی اور محترمہ پٹیل کو خاموشی توڑنی چاہئے۔

نئی دہلی۔  کانگریس نے گجرات کی وزیر اعلی آنندی بین پٹیل کی بیٹی انار پٹیل کی حصہ داری والی کمپنی کو کوڑیوں کے دام سرکاری زمین دیے جانے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ گزشتہ دو تین دن میں اس معاملے میں جو نئے انکشافات ہوئے ہیں، ان کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی اور محترمہ پٹیل کو خاموشی توڑنی چاہئے۔ کانگریس کے سینئر ترجمان منیش تیواری نے یہاں پارٹی کی معمول کی پریس بریفنگ میں نامہ نگاروں سے کہا کہ یہ معاملہ پوری طرح سے بے ضابطگی، بدعنوانی اور باہمی مفادات سے جڑاہوا ہے اور اس سلسلے میں جو انکشافات ہوئے ہیں اس سے یہ معاملہ اور سنگین ہو گیا ہے اور مسٹر مودی اور محترمہ پٹیل کو اس پر خاموشی توڑنی چاہئے۔


انہوں نے کہا کہ مسٹر مودی کے وزیر اعلی کے عہدے کے دوران اس زمین کے الاٹمنٹ کے لئے قوانین میں تبدیلی ہوئی ہے لہذا وزیر اعظم کو اس معاملے میں بیان دینا چاہئے۔ سپریم کورٹ سےاس کیس میں از خود نوٹس لینے کی اپیل کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس کی عدالت کی نگرانی میں تحقیقات ہونی چاہئے۔ انہوں نے سوال کیا کہ کس کو اور کس وجہ سے فائدہ پہنچانے کے لئے قوانین کی خلاف ورزی کی گئی، اس کا جواب ملک جاننا چاہتا ہے کہ جنگلات سے متعلق قانون کی خلاف ورزی کس کو فائدہ پہنچانے کے لئے کیا گیا ہے۔

First published: Feb 09, 2016 10:18 AM IST