ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

عدالت کی نگرانی میں وجے مالیہ معاملہ کی تفتیش ہو: کانگریس

شیرگل نے کہا کہ یہ حکومت ’کامن مین‘ (عام آدمی) کی جگہ ’کون مین‘ (گھپلہ بازوں) کے لئے کام کررہی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Sep 15, 2018 04:37 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
عدالت کی نگرانی میں وجے مالیہ معاملہ کی تفتیش ہو: کانگریس
کانگریس کے میڈیا پینل کے رکن جے ویر شیرگل: فوٹو جے ویر کے ٹوئٹر پیج سے۔

 کانگریس نے مودی حکومت پر عام لوگوں کی بجائے ’گھپلہ بازوں‘ کے لئے کام کرنے کا الزام لگاتے ہوئے آج کہا کہ بنکوں کا کروڑ روپے کا قرض لیکر فرار ہوئے وجے مالیا کے معاملہ میں حکومت اور مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) پر اعتماد نہیں کیا جاسکتا۔ اس لئے اس کے ملک سے فرار ہونے کے تعلق سے عدالت کی نگرانی میں آزادانہ تفتیش کرائی جانی چاہئے۔ کانگریس کے میڈیا پینل کے رکن جے ویر شیرگل نے یہاں پریس کانفرنس میں کہا کہ مالیا کو بھگانے میں جس طرح سی بی آئی کے ایک جوائنٹ ڈائرکٹر کا کردار سامنے آیا ہے اس کے بعد نہ تو حکومت اور نہ ہی تفتیشی ایجنسی پر اعتماد کیا جاسکتا ہے۔ اس لئے ہم اس معاملہ کی آزادانہ جانچ کی مانگ کرتے ہیں۔ ہم چاہتے ہیں کہ یہ تفتیش عدالت کی نگرانی میں کرائی جائے۔


 شیرگل نے کہا کہ یہ حکومت ’کامن مین‘ (عام آدمی) کی جگہ ’کون مین‘ (گھپلہ بازوں) کے لئے کام کررہی ہے۔ انہوں نے دعوی کیا کہ گزشتہ چار برس میں 23ہزار بنک گھپلے ہوئے ہیں جن میں گھپلہ بازوں نے بنکوں کو 90ہزار کروڑ روپے سے زیادہ کا چونا لگایا ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ اس دوران وجے مالیا، نیرو مودی، میہول چوکسی اور راجیو گوئل سمیت 23 بڑے گھپلہ باز بنکوں کا پیسہ لیکر حکومت کی مدد سے بیرون ملک فرار ہوچکے ہیں۔


پارٹی نے مانگ کی کہ صرف مالیا ہی نہیں بلکہ تمام 23مفروروں کو ملک چھوڑ کر جانے میں کس نے مدد کی اس کی تفتیش ہونی چاہئے۔ ان معاملات میں راست طورپر وزیراعظم، وزیرخزانہ اور سی بی آئی کی ذمہ داری طے کی جانی چاہئے۔ وزیراعظم کو پارلیمنٹ کے ذریعہ ملک کو بتانا چاہئے کہ ان مفرور اقتصادی مجرموں کو کب ملک میں واپس لایا جائے گا اور عام لوگوں کا جو پیسہ لیکر یہ لوگ بیرون ملک فرار ہوگئے ہیں اس کی تلافی کیسے کی جائے گی۔

First published: Sep 15, 2018 04:36 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading