ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اتحاد کے لئے کانگریس نے راہل گاندھی کو سونپی ذمہ داری، سماجوادی پارٹی نے رکھی شرط

لوک سھا انتخابات 2019 میں اتحاد کے لئے کانگریس نے راہل گاندھی کو ذمہ داری سونپی ہے۔ وہ اس پر آگے کی حکمت عملی طے کریں گے۔

  • Share this:
اتحاد کے لئے کانگریس نے راہل گاندھی کو سونپی ذمہ داری، سماجوادی پارٹی نے رکھی شرط
سی ڈبلیو سی میٹنگ کے دوران سونیا گاندھی اور راہل گاندھی

کانگریس نے 2019 میں عام انتخابات کے لئے اترپردیش میں سماجوادی پارٹی کے ساتھ اتحاد ہونے کا اعتماد ظاہر کیا ہے۔  کانگریس ورکنگ کمیٹی (سی ڈبلیو سی) کی تشکیل نو کے بعد پارٹی کے ذرائع نے بتایا کہ سماجوادی پارٹی کے قومی صدر اکھلیش یادو کے کانگریس کے ساتھ اتحاد نہ کرنے کی خبریں صرف زیادہ حاصل کرنے کی کوشش ہیں۔


اتحاد کے امکانات کے لئے راہل گاندھی نے ایک گروپ بھی بنایا ہے۔ حالانکہ سابق وزیرخزانہ پی چدمبرم نے کہا کہ جن ریاستوں میں کانگریس مضبوط ہے، وہاں اسے اکیلے اپنے دم پرمیدان میں جانا چاہئے اورضرورت پڑنے پر وہاں بھی اتحاد کرنا چاہئے۔


سی ڈبلیو سی کے بیشترارکان نے زوردیا کہ کانگریس کو مشترکہ اپوزیشن کی قیادت کرنی چاہئے کیونکہ اس کی سب سے زیادہ ریاستوں میں پہنچ ہے۔ امبیکا سونی اور ملکا ارجن کھڑگے جیسے سینئرکانگریس لیڈروں نے سی این این - نیوز 18 کو بتایا کہ سی ڈبلیو سی نے اتحاد اور 2019 کی حکمت عملی بنانے کے لئے راہل گاندھی کو ذمہ داری سونپی ہے۔


کھڑگے نے بتایا کہ سی ڈبلیو سی نے اتحاد کے معاملے پر غوروخوض کیا۔ الگ الگ ریاستوں میں اتحاد کو لے کر ایک حکمت عملی بنائی جائے گی اور اب اس پر عمل بھی شروع کردیا جائے گا۔

اس بارے میں سماجوادی پارٹی کی طرف سے کہا گیا ہے کہ اگرکانگریس یوپی میں سیٹ چاہتی ہے تو اسے راجستھان، مدھیہ پردیش اورچھتیس گڑھ میں باعزت طریقے سے سماجوادی پارٹی کوبھی سیٹیں دینی چاہئے۔ واضح رہے کہ بی ایس پی نے بھی اسی طرح کے مطالبات کانگریس کے سامنے رکھی ہے۔ یوپی میں سماجوادی اوربی ایس پی ساتھ الیکشن لڑنے کےلئے تیارہیں۔ اب کانگریس کو ساتھ لینے پر بھی غورکیا جارہا ہے۔

اس سے قبل سی ڈبلیوسی کی میٹنگ میں بطورصدرراہل گاندھی نے کہا "آنے والے الیکشن میں کانگریس کے ووٹ کی بنیاد کو مضبوط کرنا اوربڑھانا موجودہ وقت میں ہمارا سب سے بڑا کام ہے۔ ہر پارلیمانی حلقہ میں ان لوگوں کی شناخت کرنی ہوگی، جو کانگریس کو ووٹ نہیں دیتے ہیں۔ اس کے بعد ان تک پہنچنے کےلئے ہمیں آگے کی حکمت عملی اپنانی ہوگی تاکہ ایسے ووٹروں کا بھروسہ جیت سکیں۔
First published: Jul 22, 2018 06:58 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading