ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کیجریوال اور وزیر اعظم مودی میں ڈیل ، نجیب جنگ کو بنایا قربانی کا بکرا : کانگریس

کانگریس کے لیڈر اجے ماکن نے کہا کہ ہمیں لگ رہا ہے کہ دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال اور وزیر اعظم مودی جی میں کوئی بڑی ڈیل ہوئی ہے اور نجیب جنگ جی کو قربانی کا بکرا بنایا گیا ہے۔

  • Pradesh18
  • Last Updated: Dec 22, 2016 07:27 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کیجریوال اور وزیر اعظم مودی میں ڈیل ، نجیب جنگ کو بنایا قربانی کا بکرا : کانگریس
file photo

نئی دہلی : دہلی کے لیفٹیننٹ گورنر نجیب جنگ کے اچانک استعفی دینے پر کانگریس نے سوال کھڑا کیا ہے۔ کانگریس کے لیڈر اجے ماکن نے کہا کہ ہمیں لگ رہا ہے کہ دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال اور وزیر اعظم مودی جی میں کوئی بڑی ڈیل ہوئی ہے اور نجیب جنگ جی کو قربانی کا بکرا بنایا گیا ہے۔ ایسا پہلی مرتبہ ہوا ہے کہ اس طرح کسی کو ہٹایا گیا ہے۔ ماکن نے الزام لگایا کہ لیفٹیننٹ گورنر پر استعفی دینے کیلئے دباؤ ڈالا گیا۔ ہم مرکزی حکومت سے اس کی وجہ جاننا چاہتے ہیں، کیونکہ کوئی بھی لیفٹیننٹ گورنر نہیں کہے گا کہ اس نے دباؤ میں استعفی دیا ہے۔

اجے ماکن نے یہ بھی کہا کہ اگر مرکزی حکومت اپنے کسی سپه سالار یا آر ایس ایس کے کسی نمائندے کو لائے گی ، تو کانگریس اس کی مخالفت کرے گی۔ اگر بی جے پی لیفٹیننٹ گورنر کے عہدہ پر سیاست کرے گی ، تو کانگریس اس کی مخالفت کرے گی۔ لیفٹیننٹ گورنر، وزیر داخلہ اور مرکزی حکومت کے نمائندے ہوتے ہیں، ان کے کہنے پر کام کرتے ہیں، دہلی میں مئی میں جو ضمنی انتخابات ہوئے ، اس میں بی جے پی تیسرے نمبر پر رہی۔ انہوں نے سوال کیا کہ کیا اس کی سزا نجیب جی کو دی گئی ہے؟

دہلی کے وزیر اعلی کیجریوال نے استعفی پر حیرانی کا اظہار کرتے ہوئے ٹویٹ کیا اور کہا کہ 'جناب نجیب جنگ کا استعفی میرے لئے حیران کن ہے، مستقبل کے منصوبوں کے لئے میں انہیں نیک خواہشات دیتا ہوں۔

ادھر بی جے پی لیڈر وجیندر گپتا نے کہا کہ لیفٹیننٹ گورنر کا استعفی میرے لئے بھی حیرانی کی بات ہے۔ انہوں نے دہلی میں اچھے کام کرنے کی کوشش کی، انہوں نے کبھی اپنے صبر کا باندھ ٹوٹنے نہیں دیا، انہوں نے اتنا ضرور کہا تھا کہ اگلے ہفتے میں چھٹی پر ہوں، لیکن استعفی دینے کی بات نہیں کہی تھی، اچھا ہوتا اگر وہ مزید کام کرتے۔ انہوں نے کہا ہے کہ وہ اپنے پڑھائی لکھائی کے کام میں واپس جانا چاہتے ہیں، یہ بات بھی ٹھیک ہے۔

وہیں لیفٹیننٹ گورنر نجیب جنگ کے او ایس ڈی اجے چودھری نے کہا کہ جنگ صاحب اپنے ذاتی وجوہات کی بنا پر استعفی دے رہے ہیں ۔ امکان ہے کہ وہ دوبارہ تعلیم کے میدان میں جائیں گے۔

خیال رہے کہ دہلی میں کیجریوال حکومت اور لیفٹیننٹ گورنر کے درمیان حقوق کی لڑائی کافی تلخ ہو گئی تھی۔ معاملہ سپریم کورٹ تک جا پہنچا ہے۔ کیجریوال نے کئی مرتبہ جنگ پر مرکزی حکومت کے اشارے پر کام کرنے کا بھی الزام لگایا تھا۔ یہاں تک کہ انہوں نے لیفٹیننٹ گورنر کا موازنہ 'ہٹلر سے کر ڈالا تھا۔ دہلی حکومت کا الزام تھا کہ لیفٹیننٹ گورنر جان بوجھ کر حکومت کے اہم پروجیکٹوں میں روڑے اٹکا رہے ہیں۔
First published: Dec 22, 2016 07:27 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading