اپنا ضلع منتخب کریں۔

    کانگریس کا "ںیو انڈیا"نعرے پرنشانہ،کہا نئے ہندستان کے بدلے ہمیں پرانا ہندستان ہی لوٹا دیا جائے

    کانگریس لیڈر غلام نبی آزاد ۔ فائل فوٹو

    کانگریس لیڈر غلام نبی آزاد ۔ فائل فوٹو

    روزگا،سکیورٹی ڈپلومیسی سمیت تمام مورچوں پر مرکزی سرکار کے ناکام رہنے کا الزام لگاتے ہوئے کانگریس نے کہا کہ اسے نیا انڈیا نہیں چاہئے اور وہ چاہتی ہیکہ پرانہ ہندستان ہی لوٹا دیا جائے۔جہاں سماجی ہم آہنگی ہو۔راجیہ سبھا میں اپوزیشن کے لیڈر غلام نبی آزاد نے کہا کہ اس حکومت نے سماج کو الگ حصوں میں تقسیم کر دیا ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی۔روزگا،سکیورٹی ڈپلومیسی سمیت تمام مورچوں پر مرکزی سرکار کے ناکام رہنے کا الزام لگاتے ہوئے کانگریس نے کہا کہ اسے نیا انڈیا نہیں چاہئے اور وہ چاہتی ہیکہ پرانہ ہندستان ہی لوٹا دیا جائے۔جہاں سماجی ہم آہنگی ہو۔راجیہ سبھا میں اپوزیشن کے لیڈر غلام نبی آزاد نے کہا کہ اس حکومت نے سماج کو الگ حصوں میں تقسیم کر دیا ہے۔حکومت نے پہلے اپوزیشن کی پارٹیوں کو بانٹ دیا اور پھر شیعہ ۔سنی میں تقسیم کر دیا گیا اور اب خاندان کو بانٹنے کی کوشش کر رہی ہے۔
      حکومت کے "ںیو اڈیا"نعرے پر نشانہ لگاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ اس نئے ہندستان ،کے بدلے ہمیں پرانا ہندستان ہی لوٹا دیا جائے۔ہمیں مہاتما گاندھی کا ہندستان چاھئےجہاں ہندو۔مسلم ایک دوسرے کیلئے خون دیں اور جہاں لوگوں میں خوف نہیں ہو۔انہوں نے کہا کہ لیڈروں کو فون ٹیپنگ کا بھی ڈر ہے۔مزید انہوں نے چھوٹی چھوٹی بچیوں کی آبرو ریزی کے اقعات کا بھی ذکر کیا اور کہا کہ حکومت نے اسے روکنے کیلئے کوئی قدم نہیں اٹھایا۔

      صدر جمہوریہ کے خطاب پر راجیہ سبھا میں شکریہ کی تجویز پر چرچہ میں حصہ لیتے ہوئے آزاد نے حکومت پرحملہ بولا اور کہا کہ یہ حکومت "گیم چینجر نہیں بلکہ نیم چینجر "ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ حکومت ریپیکیجنگ کرنے میں ماہر ہے اور پرانی اسکیموں کا ہی نام بدل کر انہیں اپنی نئی اسکیمیں بتا رہی ہے۔
      First published: