ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

جموں وکشمیراسمبلی مرکزکے اشارے پرتحلیل کی گئی، ملک کا اسٹریٹجک نقصان ہوا: کانگریس

کانگریس ترجمان منیش تیواری نے کہا کہ گورنرکے بیان کی تصدیق بی جے پی کے ایک جنرل سکریٹری کے بیان سے بھی ہوتی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Nov 27, 2018 09:37 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
جموں وکشمیراسمبلی مرکزکے اشارے پرتحلیل کی گئی،  ملک کا اسٹریٹجک نقصان ہوا: کانگریس
کانگریس لیڈر اور پارٹی ترجمان منیش تیواری: فائل فوٹو۔

نئی دہلی: کانگریس نے الزام لگایا ہے کہ جموں وکشمیرکےگورنرستیہ پال ملک نے بھارتیہ جنتا پارٹی کی مرکزی قیادت کےاشارے پرریاستی اسمبلی تحلیل کی ہے اوران کے اس فیصلے سے ملک کو اسٹریٹیجک نقصان ہوا ہے۔ کانگرس ترجمان منیش تیواری نے یہاں پریس کانفرنس میں یہ بات کہی۔

منیش تیواری نے کہا کہ گورنر نے بی جے پی کی مرکزی قیادت کے کہنے پریہ قدم اٹھایا ہے۔ ملک کے پارٹی کی مرکزی قیادت کے اشارے پر اسمبلی تحلیل کرنے اوربعد میں بیان واپس لینے سے متعلق سوال پرکانگریس ترجمان نے کہا کہ گورنرکے بیان کی تصدیق بی جے پی کے ایک جنرل سکریٹری کے بیان سے بھی ہوتی ہے۔


واضح رہے کہ بی جے پی جنرل سکریٹری نے کہا تھا کہ ریاست میں اگر ان کی حکومت نہیں بن رہی ہے توکسی کی حکومت نہیں بننی چاہئے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ گورنرستیہ پال ملک نے ریاستی اسمبلی تحلیل کرنے کا فیصلہ جس کے اشارے پر بھی کیا گیا ہو، لیکن ان کے اس فیصلے سے ملک کواسٹریٹیجک نقصان ہوا ہےاور جموں وکشمیر کوطویل عرصے تک اس کا خمیازہ بھگتنا پڑے گا۔

کانگریس ترجمان نے کہا کہ مودی حکومت کی، جس طرح سے پاکستان کے لئے کوئی پالیسی نہیں ہے، اسی طرح سے جموں وکشمیرکے لئے بھی اس کے پاس کوئی پالیسی نہیں ہے۔ گورنرکے فیصلے سے ہوئے نقصان کا اثرریاست میں بہت دیر تک نظر آئے گا۔

First published: Nov 27, 2018 09:37 PM IST