உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    زرعی قوانین کی مخالفت میں ٹریکٹر چلا کر پارلیمنٹ پہنچے راہل گاندھی ، کہا: کسانوں کا پیغام لایا ہوں

    ٹریکٹر چلا کر پارلیمنٹ پہنچے راہل گاندھی ، کہا: کسانوں کا پیغام لایا ہوں ۔

    کانگریس لیڈر کے اس انداز سے پارلیمنٹ پہنچنے پر واضح ہوگیا کہ رواں ہفتے بھی پارلیمنٹ میں کام کاج ہونے والا نہیں ہے اور جس طرح گزشتہ پورا ہفتہ ہنگامے کی نذر ہو گیا ، اس ہفتے بھی پارلیمنٹ میں وہی نظارہ دیکھنے کو ملے گا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی : کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی زراعت سے متعلق تینوں قوانین کو واپس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے پیر کے روز ٹریکٹر سے پارلیمنٹ ہاؤس پہنچے اور کہا کہ یہ تینوں قوانین کسان مخالف ہیں ، اس لئے انہیں واپس لینا ہی پڑے گا ۔ راہل گاندھی نے کہا کہ یہ تینوں قوانین کسان مخالف ہیں اور ان کو واپس لینے کے سوا اور کوئی متبادل نہیں ہے ، اس لئے انہیں فوری طور پر مسترد کیا جانا چاہئے ۔ راہل گاندھی جس ٹریکٹر سے پارلیمنٹ ہاؤس پہنچے اس کے آگے بینر پر لکھا تھا کہ حکومت تینوں کسان مخالف زرعی قوانین کو واپس لے۔

      کانگریس لیڈر کے اس انداز سے پارلیمنٹ پہنچنے پر واضح ہوگیا کہ رواں ہفتے بھی پارلیمنٹ میں کام کاج ہونے والا نہیں ہے اور جس طرح گزشتہ پورا ہفتہ ہنگامے کی نذر ہو گیا ، اس ہفتے بھی پارلیمنٹ میں وہی نظارہ دیکھنے کو ملے گا۔


      کانگریس اور دیگر اپوزیشن جماعتوں نے گذشتہ ہفتے تقریبا سبھی دن پارلیمنٹ ہاؤس کمپلیکس میں بابائے قوم مہاتما گاندھی کے مجسمے کے سامنے پارلیمنٹ شروع ہونے سے پہلےاحتجاج کیا اور زراعت سے متعلق تینوں قوانین کو واپس لینے کا مطالبہ کیا اور پھر ایوان میں ہنگامہ برپا ہوا ، جس کی وجہ سے پورا ہفتہ پارلیمنٹ کی کاروائی نہیں چل سکی ۔

      بتادیں کہ اہم طور پر پنجاب ، ہریانہ اور مغربی اترپردیش کے کسان تینوں زرعی قوانین کے خلاف گزشتہ سال نومبر سے دہلی کی سرحدوں پر احتجاج کررہے ہیں ۔ مظاہرہ کررہے کسانوں میں سے 200 سے زیادہ کسانوں کا ایک گروپ خصوصی اجازت ملنے کے بعد اب وسطی دہلی کے جنتر منتر پر مظاہرہ کررہا ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: